تازہ ترین
  • بریکنگ :- غلام اسحاق خان نےبھی مجھےوزیراعظم بننےکی پیشکش کی تھی،شہبازشریف
  • بریکنگ :- حکمت عملی بناتےتونوازشریف چوتھی باروزیراعظم ہوتے،شہبازشریف
  • بریکنگ :- ہمیں ملک کیلئےذاتی اناکوختم کرناچاہیے،شہبازشریف
  • بریکنگ :- آئیں ماضی کی تلخیوں کوختم کریں،شہبازشریف
  • بریکنگ :- میرےاستعفےکی خبریں جعلی ہیں،منظرعام سےغائب نہیں ہوا،شہبازشریف
  • بریکنگ :- حکومت بتائےڈاکٹرطاہرشمسی کوکراچی سےکس نےبلایا،شہبازشریف
  • بریکنگ :- (ن) لیگ میں مشاورت سےفیصلےہوتےہیں،شہبازشریف
  • بریکنگ :- نوازشریف میرےقائدہیں،ہربات میں ان سےمشاورت کرتاہوں،شہبازشریف
  • بریکنگ :- ہم سیاستدان آلہ کاربنےہیں،اس حمام میں سب ننگےہیں،شہبازشریف
  • بریکنگ :- ہمارےملک میں سیاستدان بھی استعمال ہوئے،شہبازشریف
  • بریکنگ :- پرویزمشرف نےمجھےوزیراعظم بنانےکی پیشکش کی تھی،شہبازشریف
  • بریکنگ :- جتنی سپورٹ عمران خان حکومت کوملی اتنی کسی کونہیں ملی،شہبازشریف
  • بریکنگ :- اتنی سپورٹ کےباوجودحالات خراب ہیں،شہبازشریف
  • بریکنگ :- کارگل معاملےپرنوازشریف کوکہامشرف کوامریکالےجائیں،شہبازشریف
  • بریکنگ :- ایک دوست نےمشرف کوامریکالےجانےکی مخالفت کی،شہبازشریف
  • بریکنگ :- ہمیں جیلوں میں ڈالنےکافیصلہ فردواحدمشرف کاتھا،شہبازشریف
  • بریکنگ :- 2 بارنیب کامہمان بن چکاہوں،شہبازشریف
  • بریکنگ :- عمران خان کابس چلےتومجھےدوبارہ گرفتارکرالیں،شہبازشریف
  • بریکنگ :- مجھ پرجوسختیاں کی گئیں ان سےمیری سوچ نہیں بدلی،شہبازشریف
  • بریکنگ :- ہم یہ نہیں کہہ رہےہم فرشتےہیں،ہم سےبھی غلطیاں ہوئیں،شہبازشریف
  • بریکنگ :- ماضی کی غلطیوں سے سیکھ کرآگےبڑھناچاہیے،شہبازشریف
  • بریکنگ :- تمام اپوزیشن جماعتوں کوساتھ لےکرچلناچاہتاہوں،شہبازشریف
  • بریکنگ :- بجٹ سےپہلےتمام اپوزیشن رہنماؤں کواکٹھاکیا،عشائیہ پربلایا،شہبازشریف
  • بریکنگ :- پی ڈی ایم بنی توجیل میں تھا،جب ٹوٹی توبھی جیل میں تھا،شہبازشریف

پشاور میں آٹے کے مصنوعی بحران کے خدشات، شہری سستے داموں خریداری کیلئے دربدر

Published On 18 March,2021 08:53 am

پشاور: (دنیا نیوز) پشاورمیں آٹے کے مصنوعی بحران کے خدشات پیدا ہو گئے، سرکاری آٹا شہر بھر سے غائب ہو گیا، شہری سستا آٹا خریدنے کےلیے دن بھرقطاروں میں کھڑے ہونے پرمجبورہیں، ڈیلر کہتے ہیں کوٹہ کم کرنے سے مسائل میں اضافہ ہو گیا۔

خیبرپختونخوا میں آٹے کی سپلائی میں کمی کے باعث مسائل اور مشکلات بڑھ گئیں، شہری سرکاری سستے آٹے کے حصول کےلیے گھنٹوں لائنوں میں کھڑے ہونے پر مجبور ہیں، آٹے کی سب سے بڑی مارکیٹ اشرف روڈ پر جہاں آٹے کی فراہمی میں کمی آئی ہے وہیں 860 روپے میں ملنے والا سرکاری سستا آٹا بھی غائب ہے، آٹے کی عدم دستیابی کے باعث شہری پریشانی میں مبتلا ہوگئے۔

آٹا ڈیلروں کے مطابق اس سے قبل مارکیٹ میں ہر ڈیلر کو یومیہ 20 کلو آٹے کے73 تھیلے فراہم کیے جاتے تھے جس کی تعداد اب کم کرکے صرف 33 تھیلے کردی گئی ہے جس کی وجہ سے مشکلات کا سامنا ہے۔ ڈیلروں کا کہنا ہے کہ حکومت گندم کے کوٹے میں اضافے کا مناسب بندوبست کرے۔

پشاورمیں فلور ملوں کو گندم کے کوٹہ کی فراہمی میں بھی کمی آئی ہے، ملوں کو اس سے قبل 7ہزار ٹن گندم یومیہ فراہم کی جاتی تھی جو اب کم کر کے صرف 5 ہزار 500 ٹن کردی گئی ہے۔