تازہ ترین
  • بریکنگ :- جنرل مکینزی کی امریکی سینیٹ کی آرمڈسروسزکمیٹی کوبریفنگ
  • بریکنگ :- افغانستان کی طرف سےپاکستان پردباؤبڑھ سکتاہے،امریکی کمانڈرسینٹرل کمانڈ
  • بریکنگ :- آنےوالےدنوں میں پاکستان کےلیےمشکلات میں اضافہ ہوسکتاہے،جنرل مکینزی
  • بریکنگ :- امریکی فوج افغانستان میں رہنی چاہیےتھی،جنرل مکینزی
  • بریکنگ :- امریکی جوائنٹ چیفس آف اسٹاف جنرل مارک ملی کی سینیٹ کمیٹی کو بریفنگ
  • بریکنگ :- ایک سال کےدوران القاعدہ کےحملےکاخدشہ ہے،جنرل مارک ملی
  • بریکنگ :- القاعدہ دوبارہ منظم ہوکرامریکاپرحملہ آورہوسکتی ہے،جنرل مارک ملی
  • بریکنگ :- ایک سال قبل کہاتھاجلدبازی میں نکل گئےتوطالبان حکومت میں آسکتےہیں،جنرل مارک

سوشل میڈیا پر جھوٹی خبریں، حکومت ذمہ داری پوری نہیں کر رہی: لاہور ہائیکورٹ

Published On 28 May,2021 04:30 pm

لاہور: (روزنامہ دنیا) چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ قاسم خان نے سوشل میڈیا سے توہین آمیز مواد نہ ہٹانے کے کیس میں وکلا کو تیاری کے ساتھ پیش ہونے کی ہدایت کر دی اور کہا ہمیں یہ معاملہ بڑی سنجیدگی سے دیکھنا ہو گا، میں سمجھتا ہوں سائبر کرائم کے قوانین کے مطابق حکومت اپنی ذمہ داری پوری نہیں کر رہی۔ کسی بھی پاکستانی قانون کے تحت حکومت نے خود کارروائی کرنا ہوتی ہے۔

بلال ریاض شیخ ایڈووکیٹ کی درخواست پر سماعت کے دوران وفاقی حکومت کے وکیل نے بتایا کہ عدالت کے حکم پر بہت ساری چیزیں ٹھیک ہو گئی ہیں۔

چیف جسٹس نے سوال کیا کہ اگر گستاخانہ مواد بیرون ملک سے اپ لوڈ ہوتا ہے تو اس پر کیسے کارروائی ہوگی اس نکتے پر آئندہ سماعت پر عدالت کی معاونت کی جائے۔

چیف جسٹس نے سوشل میڈیا پر چلنے والی جھوٹی اور بے بنیاد خبروں پرتشویش کا اظہار کیا، انہوں نے ریمارکس دیئے کہ واٹس ایپ پر چل رہا تھا ، نوبیل انعام یافتہ کسی شخص نے کہا ہے ویکسین لگوانے والے دو سال بعد مر جائیں گے ،کوئی مقناطیس لگا رہا ہے ، کوئی کیا کر رہا ہے ۔ ذمہ داروں کے خلاف آخری حد تک جاؤں گا۔