تازہ ترین
  • بریکنگ :- پاک آرمی کی چولستان کےدورافتادہ علاقوں میں مفت طبی سہولتیں،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- منصوبےکوعملی جامہ پہنانے کیلئے پاک آرمی کی خصوصی ٹیمیں تشکیل،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- ضلعی انتظامیہ کےساتھ طبی سہولتوں کی فراہمی کیلئےسرگرم ہیں،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- 2021 میں چنن پیر،کھتری بنگلہ،دین گڑھ میں میڈیکل اورآئی کیمپ کاانعقادکیاگیا
  • بریکنگ :- چاہ ناگراں،چاہ ملکانہ میں میڈیکل اورآئی کیمپ کا انعقادکیاجاچکاہے،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- کالاپہاڑ،احمدپورشرقیہ، منچن آباد اور چشتیاں میں فری میڈیکل اورآئی کیمپ کا انعقادکیاگیا
  • بریکنگ :- 12 ہزارافراد کوفری طبی سہولیات مہیا کی جا چکی ہیں،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- تحصیل اسپتال فورٹ عباس میں فری میڈیکل کیمپ 12سے 17 اکتوبرتک جاری ہے
  • بریکنگ :- 15 اکتوبر 2021کوکورکمانڈر بہاولپورنےآئی کیمپ کا دورہ کیا،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- کورکمانڈربہاولپورنےکیمپوں میں دی گئی سہولتوں کاجائزہ لیا،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- کورکمانڈرنےہدایت کی کہ زیادہ ترمریضوں کوطبی سہولتیں دی جائیں،آئی ایس پی آر

سوشل میڈیا پر ڈچ نرسوں کی کورونا ویکسینیشن سے انکار کی جعلی خبریں

Published On 23 July,2021 08:37 pm

ایمسٹرڈیم: (ویب ڈیسک) سوشل میڈیا پر ان دنوں یہ جعلی خبریں وائرل ہوئی تھیں جس میں کہا گیا تھا کہ نیدرلینڈ سے تعلق رکھنے والی لگ بھگ 87 ہزار نرسوں نے عالمی وبا کورونا وائرس سے بچاؤ کے حفاظتی ٹیکے لگوانے سے انکار کر دیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق جیسے ہی یہ خبر سوشل میڈیا پر آئی اسے سینکڑوں لوگوں نے بغیر تصدیق کے آگے پھیلا دیا۔ یہ خبر سب سے پہلے ایک بلاگنگ سائٹ پر شیئر کی گئی تھی۔

اس بلاگ پوسٹ کیساتھ اکتوبر 2020ء کی ایک ویڈیو بھی منسلک کی گئی ہے جس میں نیدرلینڈ کی خواتین کووڈ ویکسی نیشن کے بارے میں اپنے تحفظات بیان کرتے نظر آ رہی ہیں۔ اس میں ایک خاتون نے دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ کورونا وائرس کچھ نہیں بس ایک عام سا نزلہ زکام ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق یہ ویڈیو اور اس کیساتھ لکھا ہوا بلاگ سراسر جھوٹ ہے، نیدرلینڈ کے شعبہ صحت سے وابستہ 87 ہزار نرسوں نے نہ تو کبھی کورونا وائرس کروانے سے انکار کیا ہے اور نہ ہی سرکاری سطح پر اس کی تصدیق کی گئی ہے۔