تازہ ترین
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکےمزید567 کیس رپورٹ،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کورونامریضوں کی تعداد 12 لاکھ 67 ہزار 393 ہوگئی
  • بریکنگ :- ملک میں کوروناکےایکٹوکیسزکی تعداد 24 ہزار 386 ہے،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 24 گھنٹےکےدوران کوروناسےمزید 16 اموات
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کوروناسےجاں بحق افرادکی تعداد 28 ہزار 344 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکے 864 مریض صحت یاب،این سی اوسی
  • بریکنگ :- کوروناسےصحت یاب افرادکی مجموعی تعداد 12 لاکھ 14 ہزار 663 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےکےدوران 39 ہزار 200 کوروناٹیسٹ کیےگئے،این سی اوسی
  • بریکنگ :- اسلام آباد ایک لاکھ 6 ہزار 615،گلگت بلتستان میں 10 ہزار 376 کیسز
  • بریکنگ :- آزادکشمیرمیں کورونامریضوں کی تعداد 34 ہزار 422 ہوگئی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک میں کورونامثبت کیسزکی شرح 1.44 فیصدرہی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 2 کروڑ 4 لاکھ 5 ہزار 357 کوروناٹیسٹ کیےجاچکے
  • بریکنگ :- کوروناسےمتاثر 1704 مریضوں کی حالت تشویشناک،این سی اوسی
  • بریکنگ :- پنجاب 4 لاکھ 38 ہزار 636،سندھ میں 4 لاکھ 66 ہزار 945 کیسز،این سی اوسی
  • بریکنگ :- خیبرپختونخواایک لاکھ 77 ہزار 240،بلوچستان میں 33 ہزار 159 کیس رپورٹ

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی اور ان کی اہلیہ نے کورونا ویکسین لگوا لی

Published On 15 March,2021 06:02 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) صدر مملکت پاکستان ڈاکٹر عارف علوی اور ان کی اہلیہ بیگم ثمینہ علوی نے عالمی وبا کورونا سے بچاؤ کیلیئے ویکسی نیشن کروا لی ہے۔

تفصیل کے مطابق صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی اپنی اہلیہ کے ہمراہ کورونا کی ویکسین لگوانے کوویڈ ویکسینیشن مرکز ترلائی اسلام آباد پہنچے جہاں انھیں وبائی مرض سے بچاؤ کیلئے حفاظتی ٹیکے لگائے گئے۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے صدر مملکت کا کہنا تھا کہ دنیا بھر میں اشرافیہ نے لائن توڑ کر ویکسین لگوائی لیکن پاکستان میں عمر کے حساب سے اپنی باری پر حفاظتی ٹیکے لگائے جا رہے ہیں۔

صدر مملکت کا کہنا تھا کہ حکومت نے ویکسینیشن کا آسان اور بہترین نظام بنایا ہے۔ میں نے 1166 پر رجسٹر کیا اور نمبر آنے پر ویکسین لگوائی۔

ڈاکٹر عارف علوی نے عوام سے اپیل کی کہ ویکسین ملنے کے باوجود احتیاط جاری رکھیں۔ کورونا کی تیسری لہر کے پیشِ نظر ماسک پہننا، ہاتھ دھونا اور فاصلہ برقرار رکھنا جاری رکھیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کے سمارٹ لاک ڈاؤن پالیسی اپنانے سے معاشی نقصان کم ہوا۔