تازہ ترین
  • بریکنگ :- پارلیمنٹ کوکمزورکرناجمہوریت کوکمزورکرنےکےمترادف ہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- کراچی:سندھ میں اگلی حکومت پی ٹی آئی کی ہوگی،فوادچودھری
  • بریکنگ :- ان کےدن بھی تھوڑےہیں،آخری الیکشن تھاجوانہوں نےلڑلیا،فوادچودھری
  • بریکنگ :- اپوزیشن کےپاس کوئی ایجنڈانہیں،وزیراطلاعات فوادچوھری
  • بریکنگ :- ارسانےعملی اقدام شروع کیےتومرادعلی شاہ جوتےچھوڑکربھاگ گئے،فواد چودھری
  • بریکنگ :- پانی خودچوری کررہےہیں،الزام وفاق،پنجاب پرلگایاجارہاہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- وفاق اورپنجاب میں(ن)لیگ نے 30 سال حکومت کی،فوادچودھری
  • بریکنگ :- پیپلزپارٹی نےہمیشہ جمہوریت کیخلاف اقدامات کیے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- جوپیسہ سندھ کےحوالےکرتےہیں وہ دبئی سےبرآمدہوتاہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- اپوزیشن انتخابی اصلاحات کیلئےپارلیمنٹ میں آکرتجاویزدے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- چاہتےہیں کہ پارلیمان کومضبوط بنادیں،وزیراطلاعات فوادچودھری
  • بریکنگ :- فضل الرحمان جیسےلوگ چاہتےہیں کہ سسٹم نہ چلے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- شہبازشریف کبھی مولانا،کبھی بلاول کاکندھااستعمال کررہےہیں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- شہبازشریف کےپاس(ن)لیگ کاکنٹرول نہیں ہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- شہبازشریف اپنےفیصلےکرنےمیں آزادنظرنہیں آتے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- سندھ کےسب سےبڑےدشمن سندھ پرراج کررہےہیں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- یہ ضروری ہےکہ جوپیسہ سندھ کودیں اس کی مانیٹرنگ کی جائے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- زرداری،فریال تالپور،مرادعلی شاہ کی زمینوں کاپانی چوری کیوں نہیں ہوتا؟فوادچودھری

لاہور میں کورونا کیسز میں تشویشناک حد تک اضافہ، ہیلتھ ایمرجنسی نافذ

Published On 26 March,2021 04:47 pm

لاہور: (دنیا نیوز) صوبائی دارالحکومت لاہور میں کورونا کیسز میں تشویشناک حد تک اضافے کے پیش نظر محکمہ صحت نے ہیلتھ ایمرجنسی نافذ کر دی ہے۔

محکمہ صحت نے لاہور کے تمام ہسپتالوں کے ایم ایس صاحبان کو الرٹ کر دیا ہے۔ محکمہ صحت نے تمام ہسپتالوں کے ایم ایس دفاتر کو چوبیس گھنٹے کھلے کی ہدایت کردی ہے۔

تمام ہسپتالوں کے انتظامی دفاتر پورا ہفتہ کھلے رہیں گے۔ محکمہ سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن کے ضروری عملہ کی ہفتہ اور اتوار کی چھٹی کینسل کر دی گئی ہے۔

خطرناک صورتحال کے پیش نظر محکمہ صحت نے شہر کے تمام ہسپتالوں کو الرٹ جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ کورونا بیڈز، وینٹی لیٹرز اور آکسیجن بیڈز کو فعال رکھا جائے۔

محکمہ صحت نے پنجاب حکومت کو کورونا کے مثبت کیسز کی شرح 18 فیصد ہونے کے بارے بھی آگاہ کر دیا ہے۔ سرکاری ہسپتالوں میں کورونا کے بیڈز کم ہونے پر ایکسپو سینٹر کو دوبارہ فعال کرنے کا بھی امکان ہے۔ ایکسپو کے 340 ایچ ڈی یو بیڈز کو بھی مکمل فعال رکھنے کی ہدایت کر دی گئی ہے۔

ممبر کورونا ایکسپرٹ ایڈوائرزی گروپ کا کہنا تھا کہ کورونا کی تیسری لہر کی وجہ سے تشویشناک مریضوں کی تعداد میں دوگنا اضافہ ہو چکا ہے۔ کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد نہ کیا گیا تو حالات قابو سے باہر ہو سکتے ہیں۔

دوسری جانب کورونا کی صورتحال بارے بات کرتے ہوئے ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ راولپنڈی، گوجرانوالہ اور سیالکوٹ سمارٹ لاک ڈاؤن کی زد میں ہیں، ہم ٹارگٹڈ سمارٹ لاک ڈاؤن کی طرف بڑھ رہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ کورونا وبا سے نمٹنا ایک چیلنج ہے۔ پنجاب میں وبا کے پھیلاؤ کی شرح تیزی سے بڑھ رہی ہے۔ وینٹی لیٹر پر منتقل مریضوں کی تعداد میں بھی اضافہ ہو رہا ہے۔ پنجاب میں گزشتہ 24 گھنٹے میں کورونا سے 43 اموات ہوئی ہیں۔