تازہ ترین
  • National :- سینیٹ اجلاس،انسدادگھریلوتشدداورتحفظ بل پرقائمہ کمیٹی انسانی حقوق کی رپورٹ پیش
  • National :- بزرگ شہریوں کی فلاح کےبل پرقائمہ کمیٹی انسانی حقوق کی رپورٹ بھی پیش
  • National :- دونوں رپورٹس سینیٹر ولید اقبال نے ایوان بالا میں پیش کیں
  • National :- اسلام آباد: قومی اسمبلی اجلاس،بلاول بھٹوزرداری کا اظہارخیال

اپوزیشن شفاف انتخابات پر مشاورت کیلئے ہمارے ساتھ بیٹھے: وزیراعظم

Published On 01 May,2021 03:37 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) وزیراعظم نے کہا ہے کہ ایک سال سے اپوزیشن کو انتخابی اصلاحات پر تعاون کا کہہ رہے ہیں، آئیں شفاف انتخابات پر مشاورت کیلئے ہمارے ساتھ بیٹھیں، انتخابی شفافیت کے باعث جمہوریت بھی مضبوط ہوگی۔

وزیراعظم عمران خان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ این 249 کے ضمنی انتخاب میں کم ٹرن آوٹ کے باوجود تمام جماعتیں دھاندلی کے الزامات لگا رہی ہیں، سینیٹ الیکشن اور ڈسکہ ضمنی انتخاب میں بھی یہی ہوا تھا، 1970 کے علاوہ ہر الیکشن میں دھاندلی کا شور ہوا اور نتائج پر سوالات اٹھائے گئے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ 2013 کے عام انتخابات میں 133 حلقوں پر انتخابی عذرداری کی شکایات سامنے آئیں، ہم نے چار حلقے کھولنے کا مطالبہ کیا، چاروں میں دھاندلی ثابت ہوئی، ہمیں دھاندلی کے خلاف جوڈیشل کمیشن بنوانے میں ایک سال لگا، 126 دن کا دھرنا دینا پڑا، جوڈیشل کمیشن نے 2013 کے انتخابات میں 40 خامیوں کی نشاندہی کی، بدقسمتی سے کوئی ٹھوس انتخابی اصلاحات نہیں کی گئیں۔

وزیراعظم نے مزید کہا کہ الیکشن کی ساکھ برقرار رکھنے کا واحد حل الیکٹرانک ووٹنگ مشین اور ٹیکنالوجی کا استعمال ہے، اپوزیشن کو دعوت دیتا ہوں کہ انتخابی اصلاحات پر ہمارے ساتھ بیٹھیں، اپوزیشن ہمارے ساتھ بیٹھ کر دستیاب الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں کے ماڈل کا انتخاب کرے۔