تازہ ترین
  • بریکنگ :- ظلم کایہ دورختم ہونےکوہےڈٹےرہو،فوادچودھری
  • بریکنگ :- حکومت سیاسی خودکشی کررہی ہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- پی ٹی آئی رہنماؤں کےگھروں پرچھاپوں اورگرفتاریوں کی مذمت کرتےہیں،شفقت محمود
  • بریکنگ :- چادراورچاردیواری کاتقدس پامال کیاجارہاہے،سینیٹراعجازچودھری
  • بریکنگ :- ریاستی غنڈہ گردی کاڈٹ کرمقابلہ کریں گے،سینیٹراعجازچودھری
  • بریکنگ :- جوافسران بھی سیاسی کرداراداکریں گےانہیں نتائج کاسامناکرناپڑےگا،فوادچودھری
  • بریکنگ :- پی ٹی آئی کارکنوں کےخلاف مختلف شہروں میں آپریشن شروع ہوگیا،فواد چودھری
  • بریکنگ :- موجودہ حکومت اپنااصلی رنگ دکھارہی ہے،رہنما پی ٹی آئی شفقت محمود
  • بریکنگ :- پارٹی رہنماؤں اورکارکنوں کےگھروں پرپولیس چھاپوں کی مذمت کرتےہیں،اعجازچودھری
  • بریکنگ :- پی ٹی آئی رہنماؤں اورکارکنوں کےگھروں پرچھاپوں کی مذمت،حسان خاور
  • بریکنگ :- امپورٹڈحکومت ریاستی دہشت گردی پراترآئی،پی ٹی آئی رہنماحسان خاور
  • بریکنگ :- بیوروکریسی امپورٹڈحکومت ‬کےغیرآئینی احکامات تسلیم نہ کرے،فرخ حبیب
  • بریکنگ :- پوری قوم آپ کودیکھ رہی ہے،حق اورسچ کاساتھ دیں،فرخ حبیب
  • بریکنگ :- فاشسٹ جماعتوں نےہمارےدورحکومت میں 4 لانگ مارچ کیے،عثمان بزدار
  • بریکنگ :- پی ٹی آئی نےاپنی حکومت میں کسی کوجلسےجلوسوں سےنہیں روکا،عثمان بزدار
  • بریکنگ :- ‏جوبھی اہلکاریہ غیرقانونی کام کررہےہیں انہیں جلدحساب دیناپڑےگا،عثمان بزدار

'افغان حکومت میں تاجک، ازبک اور ہزارہ برادری کی شمولیت کیلئے مذاکرات کا آغاز'

Published On 18 September,2021 03:06 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ افغانستان میں تمام دھڑوں کی نمائندہ حکومت کے قیام کے سلسلے میں طالبان سے بات چیت کا آغاز کر دیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹرپر لکھا کہ تاجکستان کے دارالحکومت دوشنبے میں افغانستان کے ہمسایہ ممالک کے رہنماؤں سے ملاقاتیں کیں، خصوصاً تاجکستان کے صدر امام علی رحمان سے طویل بات چیت کے بعد افغان طالبان کیساتھ مذاکرات شروع کیے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ایک شمولیتی حکومت کی خاطر تاجک، ہزارہ اور ازبک برادری کی افغان حکومت میں شمولیت کے لیے طالبان سے مذاکرات کی ابتدا کر دی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ 40 برس کی لڑائی کے بعد (ان دھڑوں کی اقتدار میں) یہ شمولیت ایک پرامن اور مستحکم افغانستان کی ضامن ہو گی جو محض افغانستان ہی نہیں بلکہ خطے کے بھی مفاد میں ہے۔

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے افغانستان سے متعلق حالیہ بیان میں کہا ہے کہ افغانستان میں امن نہ صرف طالبان بلکہ پورے خطے کے مفاد میں ہے۔ وزیراعظم عمران خان اور تاجک صدر امام علی رحمان طالبان اور تاجکوں کو قریب لانے میں اپنا کردار ادا کریں گے۔ افغانستان کے مسائل کا پائیدار حل تلاش کرنے کے لیے ان دونوں دھڑوں کو ساتھ ملانا ضروری ہے۔