تازہ ترین
  • بریکنگ :- وزیراعلیٰ ہاؤس کے باہردھرنا، پولیس کا ایم کیو ایم کارکنوں پرلاٹھی چارج
  • بریکنگ :- کراچی:پولیس کی ایم کیوایم کارکنوں پرشیلنگ،متعدد زخمی
  • بریکنگ :- کراچی:ایم کیوایم کی بیشترخواتین کارکن بھی زخمی
  • بریکنگ :- کراچی:مشتعل مظاہرین کا پولیس پر پتھراؤ
  • بریکنگ :- پولیس نےایم کیوایم کےبیشترکارکنوں کوحراست میں لےلیا
  • بریکنگ :- کراچی:پولیس نےوزیراعلیٰ ہاؤس کےمرکزی گیٹ کوخالی کرا لیا
  • بریکنگ :- پولیس کارکن سندھ اسمبلی صداقت حسین پرلاٹھی چارج،ترجمان ایم کیوایم
  • بریکنگ :- پولیس نےصداقت حسین کوزخمی حالت میں حراست میں لےلیا،ترجمان

انگلش ٹیم کا دورہ پاکستان: حکومت کا سفارتی تعلقات استعمال کرنے کا فیصلہ

Published On 18 September,2021 07:07 pm

لاہور: (دنیا نیوز) انگلینڈ کی ٹیم کے دورہ پاکستان کے لیے وفاقی حکومت نے سفارتی تعلقات استعمال کرنے کا فیصلہ کر لیا۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز نیوزی لینڈ نے پاکستان کیخلاف سیریز کو یکطرفہ طور پر سکیورٹی وجہ بنا کر منسوخ کر دیا تھا جس کے بعد وفاقی حکومت سمیت عوام نے شدید ناراضگی کا اظہار کیا تھا۔

نیوزی لینڈ کے دورہ منسوخ ہونے کے بعد ملکی اور غیر ملکی کرکٹرز نے بھی شدید ناراضگی کیا تو پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے چیئر مین رمیز راجہ نے معاملہ آئی سی سی میں لے جانے کا اعلان کیا تھا۔

نیوزی لینڈ کے دورہ منسوخ ہونے کے بعد اطلاعات مل رہی تھیں کہ انگلینڈ بھی دورہ پاکستان سے متعلق 48 گھنٹوں میں کوئی فیصلہ کرنے جا رہا ہے۔

ان خبروں کے بعد پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی وفاقی حکومت نے انگلینڈ کی ٹیم کو دورہ پاکستان پر راضی کرنے کے لیے رابطے شروع کر دیئے ہیں۔ انگلش ٹیم کے دورہ پاکستان کے لیے سفارتی تعلقات استعمال کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت کی جانب سے انگلینڈ کے ہم منصب سے رابطہ کیے جانے کا امکان ہے، انگلش ٹیم کا دورہ پاکستان کرکٹ کے روشن مستقبل کے لیے اہمیت کا حامل ہے۔ پی سی بی سیریز کے انعقاد کے لیے ہر حربہ استعمال کرے گا۔

یاد رہے کہ انگلینڈ ٹیم نے 2 ٹی ٹونٹی میچز کے لیے اکتوبر کے دوسرے ہفتے میں پاکستان آنا ہے، پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان میچز 13 اور 14 اکتوبر کو شیڈول ہیں۔

واضح رہے کہ انگلینڈ ٹیم نے 2005 میں پاکستان کا آخری بار دورہ کیا تھا ۔

دوسری طرف  سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر قومی ٹیم کے سابق کپتان شاہد آفریدی کا کہنا تھا کہ ذہن کو پریشان کرنے والے بلیک کیپس فیصلے کے باوجود اب وقت آ گیا ہے کہ انگلش کرکٹ بورڈ الفاظ کے بجائے عمل کے ذریعے مثبت عمل دکھائے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان دورے کے لیے ایک محفوظ جگہ ہے۔ انگلش کرکٹ بورڈ گزشتہ سال کورونا میں ہماری قربانی کو نہ بھولے۔