تازہ ترین
  • بریکنگ :- وزیراعظم عمران خان سےچیئرمین پی سی بی احسان مانی کی ملاقات
  • بریکنگ :- اسلام آباد:ملاقات میں ڈومیسٹک اورانٹرنیشنل کرکٹ کےامورپرگفتگو
  • بریکنگ :- ملک میں کرکٹ کی بہتری اورلیگ کرکٹ کےفروغ کیلئےاقدامات پربھی گفتگو

دیوارِچین کی تعمیرمیں شائد چاول استعمال کئے گئے تھے

Published On 29 April,2021 10:32 am

بیجنگ:(روزنامہ دنیا) ایک تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ دیوارِ چین کی مضبوطی کا راز شاید چاول میں پوشیدہ ہے کیونکہ تحقیق کے بعد چاول میں موجود نشاستہ اور اس کے اہم اجزا اس دیوار کی اینٹوں سے ملے ہیں۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق 2300 سال قبل تعمیر کی گئی دیوارِ چین کی لمبائی 13 ہزار میل ہے جسے ایک غیرمعمولی شاہکار کہا جاسکتا ہے۔ اس میں مِنگ بادشاہت کا تعمیر کردہ حصہ آج تک بہترین حالت میں ہے جسکی کل لمبائی 5000 کلومیٹر سے زائد ہے۔

مِنگ بادشاہت کے عہد میں پکے ہوئے گیلے چاول اور لیموں کا پانی استعمال کیا گیا تھا۔ اس کے آثار اب اس اینٹوں میں ملے ہیں۔ بعض حوالوں سے یہ بھی معلوم ہوتا ہے کہ ان اینٹوں کے گارے میں چاول کا آٹا بھی ملایا گیا تھا۔اس کی وجہ یہ ہے کہ چینی راج اور ماہرین چاول کی مضبوطی اور تعمیرات میں اسکے استعمال کے قائل تھے اور اسی بنا پر ان کی بڑی مقدار دیوارِ چین میں ملائی جاتی رہی تھی۔