تازہ ترین
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 24 گھنٹےکےدوران کوروناسےمزید 17 اموات
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کوروناسےجاں بحق افرادکی تعداد 28 ہزار 269 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےکےدوران 44 ہزار 831 کوروناٹیسٹ کیےگئے،این سی اوسی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکےمزید 720 کیس رپورٹ،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک میں کورونامثبت کیسزکی شرح 1.60 فیصدرہی،این سی اوسی

وادی پنج شیر: فریقین معاملے کے پرامن حل کیلئے مذاکرات پر رضامند

Published On 25 August,2021 11:24 pm

کابل: (دنیا نیوز) طالبان کے سینئر وفد کی پنج شیر میں احمد مسعود سے ملاقات ہوئی، مذاکرات کا اگلا دور کابل میں ہوگا۔ طالبان ملک چلانے کیلئے 12 رکنی کونسل کے قیام پرغور کر رہے ہیں۔

تفصیل کے مطابق احمد مسعود کے مشیر فہیم دشتی نے غیر ملکی میڈیا سے گفتگو میں معاملے کے افہام وتفہیم سے حل ہونے کی امید کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغانستان میں سیاسی نظام کے قیام پر غور وخوض جاری ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ طالبان 12رکنی کونسل کے قیام پر غور کر رہے ہیں۔ اعلیٰ کونسل ملک کا نظم و نسق چلائے گی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق طالبان نے سات نام فائنل کر لئے ہیں جن میں ملا عبدالغنی برادر، خلیل الرحمان حقانی، طالبان کے بانی ملا عمر کے بیٹے ملا محمد یعقوب، سابق وزیراعظم
گلبدین حکمت یار اور سابق صدر حامد کرزئی شامل ہیں۔

طالبان کی جانب سے کونسل کے قیام کی تصدیق ہونا باقی ہے۔ حکومت کے قیام سے قبل طالبان نے ملک کا نظام چلانے کے لئے مختلف شعبوں کے سربراہ کے ناموں کا اعلان کیا ہے۔ ملا عبدالقیوم ذاکر کو عبوری وزیر دفاع نامزد کیا ہے۔ صدر ابراہیم کو عبوری وزیر داخلہ کا قلمدان سونپا گیا ہے جبکہ گل آغا قائم مقام وزیر خزانہ ہونگے۔

دوسری جانب قطری نمائندہ خصوصی کے بعد ایرانی سفیر کی سابق افغان صدر حامد کرزئی اور عبداللہ عبداللہ سے ملاقات ہوئی ہے۔ افغان خواتین کے وفد اور مختلف صوبوں کے عمائدین نے بھی سینئر افغان رہنماؤں سے ملاقات کی ہے۔