تازہ ترین
  • بریکنگ :- صدارتی ریفرنس پر سپریم کورٹ کی تحریری رائے جاری
  • بریکنگ :- سپریم کورٹ کی تحریری رائے 8 صفحات پرمشتمل ہے
  • بریکنگ :- اسلام آباد:رائے تین ،دو کےتناسب سے دی گئی
  • بریکنگ :- جسٹس مندوخیل اورجسٹس مظہرعالم نے اختلاف کیا
  • بریکنگ :- صدارتی ریفرنس اکثریتی رائےسےنمٹایاگیا،سپریم کورٹ
  • بریکنگ :- منحرف ارکان تاحیات نااہلی سے بچ گئے
  • بریکنگ :- منحرف ارکان کی تاحیات نااہلی پرپارلیمنٹ قانون سازی کرے، تحریری رائے
  • بریکنگ :- اس حوالےسےقوانین کوآئین میں شامل کرنےکامناسب وقت ہے،تحریری رائے
  • بریکنگ :- پارلیمنٹ مسئلے کے حل کیلئے قانون سازی کرے، تحریری رائے
  • بریکنگ :- آرٹیکل 63اےسیاسی جماعتوں کوتحفظ فراہم کرتاہے، اکثریتی رائے
  • بریکنگ :- سیاسی جماعتوں کوغیرمستحکم کرناان کی بنیادوں کوہلانےکےمترادف ہے، اکثریتی رائے
  • بریکنگ :- منحرف ارکان کےذریعےہی سیاسی جماعتوں کوغیرمستحکم کیاجاتاہے،اکثریتی رائے
  • بریکنگ :- کسی رکن کومنحرف ہونےسےروکنےکیلئےموثراقدامات کی ضرورت ہے، اکثریتی رائے
  • بریکنگ :- منحرف ارکان کی تاحیات نااہلی کےمعاملےپرقانون سازی کی جائے،سپریم کورٹ
  • بریکنگ :- کسی منحرف رکن کاپارٹی پالیسی کےخلاف ووٹ شمارنہیں ہوگا،سپریم کورٹ
  • بریکنگ :- پارٹی پالیسی کےخلاف جانےوالےرکن کاووٹ مستردتصورہوگا،سپریم کورٹ

چین تائیوان میں ہر قسم کی اشتعال انگیزی کا جواب دیگا:شی جن پنگ کی بائیڈن کو تنبیہ

Published On 16 November,2021 07:26 pm

بیجنگ:(دنیا نیوز) امریکا اور چین کے سربراہان مملکت نے دونوں ملکوں کے مابین موجودہ کشیدگی کو ختم کرنے پر زور دیا جبکہ شی جن پنگ نے جوبائیڈن کو تنبیہ کی کہ چین تائیوان میں ہر قسم کی اشتعال انگیزی کا جواب دے گا۔

خبر ایجنسی کے مطابق امریکا اور چین کے سربراہان مملکت کے مابین آن لائن میٹنگ کا انعقاد کیا گیا، سربراہان کی میٹنگ خواشگوار ماحول میں ہوئیاور دونوں نے کھری باتیں کیں ۔

امریکی صدر جو بائیڈن اورچینی صدر شی جنگ پنگ کے درمیان مذاکرات 3 گھنٹے جاری رہے جبکہ جو بائیڈن نے چینی ہم منصب پر انسانی حقوق کی صورتحال بہتر بنانے پر زور دیا۔

شی جن پنگ نے جوبائیڈن کو تنبیہ کی کہ چین تائیوان میں ہر قسم کی اشتعال انگیزی کا جواب دے گا جبکہ امریکی صدر کا کہنا تھا کہ ہماری ذمہ داری ہے کہ امریکا اور چین کی مسابقت کو تصادم میں نہ بدلنے دیں۔

امریکی صدر نے دونوں ممالک کے درمیان "ایمانداری پر مبنی"رابطوں پر زور دیا اور کہا کہ تائیوان، ہانگ کانگ اور سنکیانگ کے معاملے پر امریکا ، چین تعلقات خرابی کا شکار ہوئے ۔