تازہ ترین
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکےمزید 720 کیس رپورٹ،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک میں کوروناکےایکٹوکیسزکی تعداد 26 ہزار 237 ہے،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 24 گھنٹےکےدوران کوروناسےمزید 17 اموات
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کوروناسےجاں بحق افرادکی تعداد 28 ہزار 269 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکے 1440 مریض صحت یاب،این سی اوسی
  • بریکنگ :- کوروناسےصحت یاب افرادکی مجموعی تعداد 12 لاکھ 9 ہزار 878 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےکےدوران 44 ہزار 831 کوروناٹیسٹ کیےگئے،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 2 کروڑایک لاکھ 96 ہزار 19 کوروناٹیسٹ کیےجاچکے
  • بریکنگ :- کوروناسےمتاثر 1958 مریضوں کی حالت تشویشناک،این سی اوسی
  • بریکنگ :- پنجاب 4 لاکھ 37 ہزار 793،سندھ میں 4 لاکھ 65 ہزار 486 کیسز،این سی اوسی
  • بریکنگ :- خیبرپختونخواایک لاکھ 76 ہزار 774،بلوچستان میں 33 ہزار 120 کیس رپورٹ
  • بریکنگ :- اسلام آبادایک لاکھ 6 ہزار 445،گلگت بلتستان میں 10 ہزار 369 کیسز
  • بریکنگ :- آزادکشمیرمیں کورونامریضوں کی تعداد 34 ہزار 397 ہوگئی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک میں کورونامثبت کیسزکی شرح 1.60 فیصدرہی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کورونامریضوں کی تعداد 12 لاکھ 64 ہزار 384 ہوگئی

فیصل آباد میں اینٹوں کی قیمت میں من مانا اضافہ، انتظامیہ خاموش تماشائی

Published On 09 August,2021 08:42 am

فیصل آباد: (دنیا نیوز) فیصل آباد میں بھٹہ مالکان کی جانب سے اینٹوں کی قیمتوں میں من مانا اضافہ کر دیا گیا ہے، اول درجہ کی ایک ہزار اینٹ کی قیمت 11500 مقرر کر دی گئی جبکہ انتظامیہ سرکاری ریٹ پر عمل کروانے میں ناکام ہے۔

گزشتہ سال ضلعی انتظامیہ نے اینٹوں کے سرکاری ریٹ مختص کئے تھے اور ان پر عمل درآمد کروانے کے لیے ٹاسک، پرائس کنٹرول مجسٹریٹ کو سونپا گیا، بھٹہ پر تیار ہونے والی اول درجہ کی ایک ہزار اینٹیں 7400 اور درجہ دوم کی اینٹوں کی قیمت 5900 روپے مقرر کی گئی، ضلعی انتظامیہ کے مقرر کردہ نرخ نامے بھٹوں پر آویزاں کرنے کا بھی حکم دیا گیا لیکن شہری کہتے ہیں کہ بھٹہ مالکان سرکاری ریٹ کی بجائے خود ساختہ مقرر کیے گئے داموں پر اینٹیں فروخت کرتے ہیں۔

بھٹہ مالکان کہتے ہیں کہ کوئلے سے ٹرانسپورٹ تک کے ریٹ بڑھ چکے، ایسے میں سرکاری ریٹ پر اینٹیں بیچنے سے انہیں نقصان ہوگا۔ اینٹوں کی مہنگے داموں فروخت پر ڈپٹی کمشنر نے موقف دیتے ہوئے دعوی کیا کہ سرکاری ریٹ کو یقینی بنائیں گئے۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ انتظامیہ کی جانب سے اگر اینٹوں کے ریٹ کنٹرول نہیں کیے گئے تو تعمیراتی کام مہنگا ہونے کے باعث متاثر ہو گا۔