تازہ ترین
  • بریکنگ :- لاہور:قیمتوں میں مزیداضافہ مسئلےکاحل نہیں ہے،شہبازشریف
  • بریکنگ :- مسئلہ حکمرانوں کی نااہلی اورکرپشن ہے،اپوزیشن لیڈرشہبازشریف
  • بریکنگ :- حکومت ملکی معیشت کانائن الیون کرچکی ہے،شہبازشریف
  • بریکنگ :- حکومت کومعیشت کی" الف ب" بھی معلوم نہیں،شہبازشریف
  • بریکنگ :- قوم کومہنگائی سےمارنےکےبجائےعمران خان گھرچلےجائیں،شہبازشریف
  • بریکنگ :- شہبازشریف کی گیس کی قیمتوں میں 35فیصداضافےکی تجویزکی مذمت
  • بریکنگ :- لاہور:حکومت آئی ایم ایف کی شرائط پوری کررہی ہے،شہبازشریف
  • بریکنگ :- حکومت نےقوم سےٹیکس فری بجٹ کاجھوٹ بولاتھا،شہبازشریف
  • بریکنگ :- ہم نےجوکچھ کہاآج سچ ثابت ہورہاہے،اپوزیشن لیڈرشہبازشریف
  • بریکنگ :- کہاتھابجٹ کےبعدمہنگائی اورٹیکسوں کانیاسیلاب آئےگا،شہبازشریف
  • بریکنگ :- گیس کی قیمتوں میں اضافہ حکومت کی ایک اورسنگین حماقت ہے،شہبازشریف
  • بریکنگ :- عوام مزیدمہنگائی برداشت نہیں کرسکتے،ظلم درظلم بندکیاجائے،شہبازشریف
  • بریکنگ :- عمران خان اپنی حماقتوں سےملک میں خانہ جنگی کرانےپرتلےہیں،شہبازشریف
  • بریکنگ :- پہلےہی گیس اوربجلی کی قیمتوں میں تاریخی اضافہ ہوچکاہے،شہبازشریف

'آٹے، چینی کیلئے کیش ٹارگٹڈ سبسڈی دینگے، آئندہ چند روز میں آٹے کی قیمت میں کمی ہوگی'

Published On 14 September,2021 11:11 am

اسلام آباد: (دنیا نیوز) شوکت ترین کا کہنا ہے کہ مہنگائی صرف پاکستان میں نہیں دنیا بھر میں ہوئی ہے، کسان سے ریٹیلر تک قیمتوں کا تعین کر رہے ہیں، احساس پروگرام کا ڈیٹا آگیا، آٹے، چینی کیلئے کیش ٹارگٹڈ سبسڈی دیں گے، آئندہ چند روز میں آٹے کی قیمت میں کمی ہوگی۔

اسلام آباد میں وفاقی وزیر شوکت ترین نے وزیر مملکت برائے اطلاعات فرخ حبیب کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ کورونا سے سپلائی چین بھی متاثر ہوئی، کورونا وبا میں پروڈکشن کم اور ٹرانسپورٹیشن بھی بند ہوئی، ماضی میں زراعت کے شعبے پر توجہ نہیں دی گئی، آٹا، گھی، چینی، دالوں پر کیش سبسڈی دیں گے، اس سے قبل گیس اور بجلی پر ٹارگٹڈ سبسڈی دے رہے تھے۔

شوکت ترین کا کہنا تھا کہ کسان سے ریٹیلر تک قیمتوں کا تعین کر رہے ہیں، احساس کا ڈیٹا آگیا، آٹے چینی کیلئے کیش ٹارگٹڈ سبسڈی دیں گے، چینی فی ٹن 430 ڈالر پر چلی گئی ہے، پسماندہ طبقے کو زیادہ سبسڈی دینے کی کوشش کر رہے ہیں، رواں ماہ کامیاب پاکستان پروگرام کا آغاز کر دیں گے، لوگوں کی آمدن بڑھانے پر زیادہ توجہ دینی ہے، پوری دنیا میں چند سال کے دوران قیمتیں بڑھی ہیں، آئی ایم ایف میں جانے سے روپے کی قدر میں کمی ہوئی، کسان کو صحیح قیمت دینے کیلئے آڑھتی کا کردار ختم کر رہے ہیں۔