تازہ ترین
  • بریکنگ :- اسلام آباد:حکومت کوبہت سےمعاشی چیلنجزکاسامنارہا،وزیرخزانہ
  • بریکنگ :- کوروناکی وجہ سےبہت سی مشکلات کاسامناکرناپڑا،شوکت ترین
  • بریکنگ :- کوروناکی وجہ سےدنیابھرمیں اشیاکی قیمتوں میں اضافہ ہوا،وزیرخزانہ

پی ایس ایل سمیت کرکٹ کا فروغ،پی سی بی کے بجٹ میں 2 ارب کا اضافہ

Published On 01 July,2021 04:37 pm

لاہور: (ویب ڈیسک) پی سی بی کے آئندہ مالی سال کے لیے منظور شدہ بجٹ میں 2 ارب روپے کا اضافہ کر دیا گیا، کل بجٹ 8.997 ارب روپے ہو گا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے بورڈ آف گورنرز کا ورچوئل اجلاس 30 جون بروز بدھ کو منعقد ہوا۔ بی او جی کی یہ رواں سال میں تیسری اور مجموعی طور پر 63ویں میٹنگ تھی۔

بی او جی نے مالی سال 22-2021 کی منظوری دے دی ہے۔ آئندہ مالی سال کے لیے پی سی بی کا منظور شدہ کُل بجٹ 8.997 ارب روپے ہے۔ یہ بجٹ ہوم اور انٹرنیشنل کرکٹ ، ڈومیسٹک کرکٹ، پی ایس ایل 6اور انتظامی امور پر خرچ کیا جائے گا ۔

آئندہ مالی سال کے لیے منظور شدہ بجٹ میں گزشتہ سال کی نسبت 2 ارب روپے کا اضافہ کیا گیا ہے۔ اس کی بڑی وجہ ملکی انٹرنیشنل سیریز کی تعداد میں 9 سے 16تک اضافہ ہونا، ڈومیسٹک ایونٹس کی تعداد میں 11 سے 19 فیصد تک اضافہ ہونا، مینز اور ویمنز کرکٹرز کے ماہوار وظیفوں میں 10 سے 25 فیصد اضافہ ہونا، ہوم سیریز کی پراڈکشن اور کووڈ 19 پروٹوکولز کے تحت ہوم کرکٹ سیریز کے لیے رقم مختص کرنا ہے۔

بی او جی نے پی ایس ایل 6 کو کامیاب انداز میں مکمل کرنے پر پی سی بی انتظامیہ کو مبارکباد پیش کی ہے۔ بی او جی نے فرنچائزمالکان اور تمام کھلاڑیوں کی تعریف کی ہے کہ جس طرح انہوں نے مشکل وقت بائیو سیکیور ببل میں گزار کر لیگ کو کامیاب بنایا۔

بی او جی نے لیگ کو کامیاب بنانے کے لیے پس پردہ اور سامنےرہتے ہوئے دونوں طریقوں سے پیشہ ورانہ انداز اپنانے پرپی سی بی کی تعریف کی ہے۔

بی او جی کا مشاہدہ ہے کہ لیگ کے بقیہ میچز کے کامیاب انعقاد سے پی سی بی نےدنیابھر میں پاکستان کا مثبت تشخض اجاگر کیا ہے۔بی او جی کو بتایاگیا ہے کہ لیگ کے ساتویں ایڈیشن کا انعقاد پاکستان میں ہوگا۔اس سلسلے میں تمام چھ فرنچائزز کی مشاورت سے سیزن 22-2021 کے لیے موزوں ونڈو کا انتخاب کیا جائے گا۔

بی او جی کو بتایا گیا کہ پی سی بی نے31-2024 کے سائیکل میں شامل آئی سی سی کے چھ ایونٹس کی میزبانی کے لیےایکسپریشن آف انٹریسٹ جمع کروادیا ہے۔ان چھ ایونٹس میں سے پی سی بی تین وینیوز پر کھیلی جانے والی آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی 2025 اور 2029 کی میزبانی کا خواہاں ہیں۔پی سی بی آٹھ وینیوز پر کھیلے جانے والے آئی سی سی ٹی ٹونٹی ورلڈکپ 2026 اور 2028 اور 10 مختلف وینیوز پر کھیلے جانے والےآئی سی سی مینز ورلڈپ 2027 اور 2031 کی میزبانی میں شراکت داری کا خواہشمند ہے۔

آئی سی سی کی ایوولیشن کمیٹی اب پی سی بی کے ایکسرپیشن آف انٹریسٹ کا بغور جائزہ لینے کے بعد اپنافیصلہ کرے گی۔ان ایونٹ کی میزبانی دینے کے عمل کا آغاز ستمبر میں شروع ہوگا۔پی سی بی پرامید ہے کہ وہ کم از کم ایک ایونٹ کی میزبانی حاصل کرلے گا۔

بی او جی کوبتایاگیا ہےکہ سیزن 22-2021 میں بائیو سیکیور پروٹوکولز اور سیکورٹی انتظامات کے حوالے سے ریسٹراڈا اور ای ایس آئی پی سی بی کی معاونت کریں گے۔ستمبر 2021 سے مارچ 2022 تک پاکستان کو نیوزی لینڈ، انگلینڈ، ویسٹ انڈیز اور آسٹریلیا کی میزبانی کرنی ہے۔پی ایس ایل 7 کے لیے بھی انہی دونوں کمپنیز کی خدمات حاصل کی جائیں گی۔

بی او جی کو آگاہ کیا ہے کہ رجسٹریشن کے عمل میں کُل 93000سے زائد کھلاڑیوں اور 3800 سے زائد کلبز نے شرکت کی۔ ان کی اسکروٹنی کا عمل مکمل ہوتے ہی نچلی سطح پر کرکٹ کا آغاز کردیا جائے گا۔

بی او جی کو بتایا گیا ہے کہ چھ کرکٹ ایسوسی ایشنز کے فرسٹ بورڈز کے سربراہان کے ساتھ سہ ماہی بنیادوں پر اجلاس کے عمل کا آغاز ہوچکا ہے تاکہ ان کے چیلنجز کو سمجھ کر ان کی معاونت کی جائے گی۔

بی او جی کو افرادی قوت سے متعلق جائزہ بھی پیش کیا گیا، جس کے تحت ادارے کو ایک پیشہ ورانہ اور متحرک بورڈ بنانا ہے۔ بی او جی کو گورننس ، رئیل اسٹیٹ ، آئین اور قانونی امور کے بارے میں بھی مکمل اپ ڈیٹ سے آگاہ کیا گیا۔