تازہ ترین
  • بریکنگ :- کوروناکانیا ویرینٹ اومی کرون 40ممالک میں پہنچ گیا،عالمی ادارہ صحت
  • بریکنگ :- اومی کرون سےابھی تک کوئی ہلاکت نہیں ہوئی،عالمی ادارہ صحت
  • بریکنگ :- لوگ نئے ویرینٹ سے گھبرائیں نہیں،عالمی ادارہ صحت
  • بریکنگ :- شہری پہلےسےثابت شدہ حفاظتی اقدامات پرعمل کریں،عالمی ادارہ صحت
  • بریکنگ :- بچاؤکےلیےزیادہ سےزیادہ لوگوں کوویکسین لگائی جائے ،عالمی ادارہ صحت
  • بریکنگ :- ویکسین کواپ گریڈکرنےسےمتعلق ابھی کچھ کہہ نہیں سکتے،عالمی ادار صحت
  • بریکنگ :- نئے ویرینٹ کےخلاف بھی پہلےسےموجودویکسین کااستعمال جاری رکھاجائے،عالمی ادارہ صحت

’کورونا ایک موسمی وائرس ہے‘: سوشل میڈیا پر پھیلنے والی خبریں جعلی قرار

Published On 05 June,2021 09:12 pm

لاہور: (ویب ڈیسک) سوشل میڈیا پر خبریں وائرل ہو رہی ہیں جس میں ڈبلیو ایچ او کی طرف سے دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ کورونا ایک موسمی وائرس ہے۔ یہاں بتاتے چلیں کہ یہ خبریں جعلی ہیں۔

سوشل میڈیا پر خبریں چل رہی ہیں کہ ڈبلیو ایچ او نے مکمل طور پر یوٹرن لینے کی اپنی غلطی تسلیم کرتے ہوئے کا ہے کہ کورونا ایک موسمی وائرس ہے۔ موسم کی تبدیلی کے دوران یہ گلے کی سوزش ہے۔ گھبرانے کی ضرورت نہیں ہے۔

پیغام کے مطابق ڈبلیو ایچ او کا کہنا ہے کہ اب کورونا مریض کو الگ تھلگ ہونے کی ضرورت ہے اور نہ ہی عوام کو معاشرتی دوری کی ضرورت ہے۔ یہ یک مریض سے دوسرے شخص میں بھی منتقل نہیں ہوتا۔

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والے پیغامات کے بعد وزارت صحت کی سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر بتایا گیا کہ سوشل میڈیا اور واٹس اپپ پر چلنے والی یہ خبر بالکل غلط ہے۔ WHO نے کبھی ایسی بات نہیں کی۔

وزارت صحت کی طرف سے جاری کردہ بیان کے مطابق احتیاطی تدابیر پر عمل کرتے ہوئے ہی ہم وبا کے پھیلاؤ پر کچھ حد تک قابو پانے میں کامیاب ہوئے ہیں۔ ہمیشہ مستند ذرائع کی خبر پر یقین کریں۔