تازہ ترین
  • بریکنگ :- ایاز امیر پرتشدد تشویشناک واقعہ ہے، بلاول بھٹو زرداری
  • بریکنگ :- متعلقہ حکام ایاز امیر پرتشدد کے معاملے کی شفاف تحقیقات کریں، بلاول بھٹو
  • بریکنگ :- ذمہ داروں کےخلاف قانونی کارروائی کی جائے، بلاول بھٹو زرداری
  • بریکنگ :- آزادی اظہاررائےبنیادی حقوق کاحصہ ہے،کسی صورت سمجھوتہ نہیں کیاجاسکتا،بلاول
  • بریکنگ :- بلاول بھٹوکی کالم نگاراورتجزیہ کارایاز امیر پرتشدد کے واقعہ کی مذمت

اعتزاز احسن کے سوشل میڈیا پر جعلی اکاؤنٹس استعمال کیے جانے لگے

Published On 04 April,2022 10:02 pm

لاہور: (ویب ڈیسک) گزشتہ کئی مہینوں سے پیپلزپارٹی کے سینیئر رہنما چودھری اعتزاز احسن کے کئی ایسے ٹویٹ سامنے آ رہے ہیں جنہیں پڑھ کر جاننے والے حیران رہ جاتے ہیں، ٹویٹر پر ان کے نام سے متعد منسوب جعلی اکاؤنٹ استعمال ہو رہے ہیں۔

برطانوی خبر رساں ادارے کے مطابق ویسے تو اعتزاز احسن کے نام سے متعدد اکاؤنٹ ہیں اور بعض اکاؤنٹ جو کہ ٹوئٹر پر موجود بھی نہیں لیکن پھر بھی انھیں ٹوئٹر اکاؤنٹ بنا کر تصویروں کی شکل میں مختلف واٹس ایپ گروپس پر شیئر کیا جاتا ہے۔ اسی طرح کا ایک اکاؤنٹ @therealaitezaz بھی ہے جس میں حال ہی میں اعتزاز احسن سے منسوب بیان میں لکھا گیا کہ امر بالمعروف جلسے نے ثابت کر دیا ہے کہ خودمختار اور بیرونی مداخلت سے پاک پاکستان پاکستانیوں کی واحد منزل اور وزیرِ اعظم عمران خان ان کے محبوب لیڈر اور قائد ہیں۔ #کپتان_کا_خوددار_پاکستان‘

اسی طرح کی بہت سی باتیں اس اکاؤنٹ سے کی جا رہی ہیں لیکن پیر کی صبح اعتزاز احسن کی بیٹی سمن احسن کا ایک ٹویٹ سامنے آیا جس میں انھوں نے واضح کیا کہ ان کے والد کے نام سے کئی جعلی اکاؤنٹ بنائے گئے ہیں جن کے ذریعے ٹویٹ کیے گئے پیغامات کو انکے والد سے منسوب کیا جا رہے ہیں۔ میرے والد اگرچہ ٹوئٹر اکاؤنٹ زیادہ استعمال نہیں کرتے لیکن اصل میں ان کا یہ @therealaitzaz اکاؤنٹ ہے۔ ساتھ ہی انہوں نے اپنے والد کا ایک پرانا ٹویٹ بھی منسلک کیا جس میں وہ اس بات کی وضاحت دے رہے تھے۔

اب اگر سرسری طور پر دیکھا جائے تو @therealaitezaz اور @therealaitzaz ایک ہی اکاؤنٹ لگتا ہے لیکن غور سے دیکھنے پر اس میں فرق پتہ چلتا ہے۔ یہ فرق ہے انگریزی کے لفظ e (ای) کا جو کہ اصل اکاؤنٹ میں تو موجود نہیں جو کہ سمن احسن نے شیئر کیا ہے لیکن دوسرے اکاؤنٹ میں موجود ہے اور اس طرح پتہ چلتا ہے کہ یہ جعلی ہے۔

خیال رہے کہ اعتزاز احسن نے اپنے اصل اکاؤنٹ سے ٹویٹ 30 جنوری، 2021 کو کی تھی اور اس میں انہوں نے سینیٹر شیری رحمان، پیپلز پارٹی کے سینیئر رہنما قمرالزمان کائرہ اور مرحوم سینیٹر رحمان ملک کو (جو اس وقت حیات تھے اور ان کی وفات اس سال 23 فروری کو ہوئی) ٹیگ کر کے لکھا ہے کہ ’میں ٹویٹ کرنے پر یقین نہیں رکھتا کیونکہ مجھے لگتا ہے کہ یہ آدھے سچ کا میڈیم ہے۔ البتہ مختلف ایڈریسز سے بہت سے جعلی ٹویٹ جاری کیے گئے ہیں جن کا مقصد میری آرا کی غلط ترجمانی کرنا اور مجھے بدنام کرنا ہے۔