تازہ ترین
  • بریکنگ :- تحریک انصاف کا 25 مئی کو لانگ مارچ کا اعلان
  • بریکنگ :- تحریک انصاف کا 25 مئی کو لانگ مارچ کا اعلان
  • بریکنگ :- 25 مئی کو 3 بجےسری نگرہائی وے پرملوں گا،عمران خان
  • بریکنگ :- ہرشعبے سے لوگ لانگ مارچ میں شرکت کریں،عمران خان
  • بریکنگ :- ہم نےجیل سےنہیں ڈرنا،جان کی قربانی دینی ہے،عمران خان
  • بریکنگ :- اسمبلیوں کی تحلیل اورشفاف الیکشن کی تاریخ چاہیے،عمران خان
  • بریکنگ :- باربارکہا جاتاہے جان کو خطرہ ہے،کوئی خطرہ نہیں،عمران خان
  • بریکنگ :- خوف ہےیہ لوگ پٹرول ،ڈیزل ،انٹرنیٹ بندکردیں گے،عمران خان
  • بریکنگ :- انٹرنیٹ،پٹرول ،ٹرانسپورٹ بندہوجائےگی،پہلےسےتیاری رکھیں،عمران خان
  • بریکنگ :- ہم جان کی قربانی دینے کیلئے تیارہیں،عمران خان
  • بریکنگ :- ہم چوروں کو کبھی تسلیم نہیں کریں گے،عمران خان
  • بریکنگ :- اسمبلی تحلیل اورالیکشن کی تاریخ ملنےتک اسلام آباد رہیں گے،عمران خان
  • بریکنگ :- بیوروکریسی نےغیرقانونی کارروائی کی توایکشن لیں گے ،عمران خان
  • بریکنگ :- غلام بننے سے بہتر موت قبول ہے،عمران خان

مقبوضہ کشمیر میں مظالم کی انتہا، 3 دہائیوں میں ایک لاکھ کے قریب کشمیری شہید کر دیئے

Published On 05 February,2021 08:25 am

سرینگر: (دنیا نیوز) بھارتی گماشتوں نے گزشتہ 3 دہائیوں میں ایک لاکھ کے قریب کشمیریوں کو شہید اور ایک لاکھ 61 ہزار کو پابند سلاسل کیا، ساڑھے 22 ہزار سے زائد خواتین بیوہ ہوئیں۔

شمع تحریک آزادی کو جلا بخشنے کیلئے کشمیری عوام نے لاکھوں شہیدوں کی قربانیاں پیش کیں تو ساتھ ہی ہزاروں خاندان قابض فوج کے مظالم سےتنگ آ کر کنٹرول لائن کے اس پار ہجرت کرنے پربھی مجبورہوئے۔

بھارت نے غیر قانونی طور پر مقبوضہ جموں و کشمیر میں گزشتہ سات دہائیوں سے ظلم و جبر کا بازار گرم کر رکھا ہے، قابض فوج کے مظالم سے تنگ آکر آزاد خطے کی جانب ہجرت کرنے والے ہزاروں منقسم کشمیری خاندانوں کے افراد انسانی بنیادی حقوق کی خلاف ورزیوں کی علامت بنے بیٹھے ہیں۔

بھارتی چیرہ دستیاں کشمیریوں کا حوصلہ تو نہ توڑ سکیں لیکن مقبوضہ خطے میں مقیم پیاروں پر ہونے والے مظالم کا دکھ ان کے چہروں سے عیاں ہے۔
کشمیر میڈیا سروس کے مطابق بھارتی گماشتوں نے گزشتہ 3 دہائیوں میں ایک لاکھ کے قریب کشمیریوں کو شہید اور ایک لاکھ 61 ہزار کو پابند سلاسل کیا، ساڑھے 22 ہزار سے زائد خواتین بیوہ ہوئیں جبکہ 5 اگست 2019 کے بعد بھارت نے غیر قانونی قبضے کو دوام بخشنے کے لئے 308 کشمیریوں کو موت کی نیند سلا دیا۔