تازہ ترین
  • بریکنگ :- ٹھل: میونسپل کمیٹی وارڈ نمبر 9 کا مکمل غیر سرکاری غیر حتمی نتیجہ
  • بریکنگ :- سانگھڑ : کھپرو اور بیرانی سےپیپلزپارٹی امیدوارکامیاب
  • بریکنگ :- سانگھڑ:ٹاؤن کمیٹی کھپرو کے 18 میں سے 13 وارڈز میں پیپلز پارٹی کامیاب
  • بریکنگ :- سانگھڑ:بیرانی ٹاؤن کمیٹی کےپانچوں وارڈز سے پیپلزپارٹی کا کلین سویپ
  • بریکنگ :- لاڑکانہ:پیپلزپارٹی نوڈیرو کے تمام 7 وارڈز سے کامیاب
  • بریکنگ :- خان پورمہرکے تمام 6 وارڈز سے پیپلزپارٹی کوبرتری
  • بریکنگ :- مورو: میونسپل کمیٹی وارڈ نمبر 3کا مکمل غیرحتمی نتیجہ
  • بریکنگ :- مورو:پیپلزپارٹی کے جان عالم 630 ووٹ لےکرکامیاب
  • بریکنگ :- ٹاؤن کمیٹی دوڑ کے 9 وارڈز سےپیپلزپارٹی کےتمام امیدوار کامیاب
  • بریکنگ :- مورو: جی ڈی اےکے اکرم قریشی 209ووٹ لےکر دوسرے نمبر پر
  • بریکنگ :- مورو : میونسپل کمیٹی وارڈ نمبر 6 کامکمل غیر سرکاری غیر حتمی نتیجہ
  • بریکنگ :- مورو:پیپلز پارٹی کےدوست علی سولنگی 460 ووٹ لےکر کامیاب
  • بریکنگ :- مورو: پی ٹی آئی کےفداحسین بھٹو 170ووٹ لےکر دوسرے نمبر پر
  • بریکنگ :- جیکب آباد: میونسپل کمیٹی کےوارڈ نمبر 4کامکمل غیر حتمی نتیجہ
  • بریکنگ :- جیکب آباد :پی ٹی آئی کے غلام حسین عمرانی 388 ووٹ لےکر کامیاب
  • بریکنگ :- جیکب آباد :پیپلزپارٹی کے نور محمد دھرپالی 380 ووٹ لےسکے
  • بریکنگ :- پنوعاقل: میونسپل کمیٹی کے وارڈ نمبر 3کا مکمل غیرحتمی نتیجہ
  • بریکنگ :- پنوعاقل :پیپلزپارٹی کےمیاں عبدالقوی 588 ووٹ لےکر کامیاب
  • بریکنگ :- پنوعاقل: آزاد امیدوارعبدالرؤف 307 ووٹ لےکر دوسرے نمبر پر
  • بریکنگ :- ٹھل :پیپلزپارٹی کے جنید سرکی 414 ووٹ لے کر کامیاب
  • بریکنگ :- ٹھل :ایس یو پی کےعلی حسن 247 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر
  • بریکنگ :- شہدادکوٹ: میونسپل کمیٹی کےوارڈ نمبر10کامکمل غیرحتمی نتیجہ
  • بریکنگ :- شہدادکوٹ:پیپلز پارٹی کےمیر باران خان 517 ووٹ لےکرکامیاب
  • بریکنگ :- شہدادکوٹ :آزاد امیدوار احمد نواز 487 ووٹ لےکر دوسرے نمبر پر
  • بریکنگ :- گمبٹ :میونسپل کمیٹی کے وارڈ نمبر 4 کا مکمل غیر سرکاری غیرحتمی نتیجہ
  • بریکنگ :- گمبٹ :پیپلزپارٹی کے سجادعلی شاہ 310ووٹ لے کر کامیاب
  • بریکنگ :- گمبٹ :جی ڈی اے کے غلام جابرشاہ 87 ووٹ لےکر دوسرے نمبر پر

سینیٹ الیکشن میں بکرا منڈی لگی، جو ہوا اس پر شرمندگی ہوتی ہے: وزیراعظم

Published On 06 March,2021 01:55 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) وزیراعظم نے کہا ہے کہ سینیٹ الیکشن میں بکرا منڈی لگی ہوئی تھی، سینیٹ انتخابات میں جو ہوا اس پر شرمندگی ہوتی ہے، ایک ماہ سے جانتے تھے سینیٹ الیکشن کیلئے پیسہ جمع کیا جا رہا ہے۔

وزیراعظم نے قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ اتحادی ہر مشکل وقت میں میرے ساتھ کھڑے رہے، مجھے آپ میں ایک ٹیم نظر آئی، ہماری ٹیم مضبوط ہوتی رہے گی، مشکل وقت سے نکلنے پر آپ مزید مضبوط ہوتے ہیں، بڑا انسان بننے کیلئے مشکل وقت کا سامنا کرو، ذہن کو جتنا آزمائشوں میں ڈالیں کہ یہ مزید مضبوط ہوگا، کسی کو تباہ کرنا ہے تو اسے آرام دہ زندگی دے دو، جب آپ مشکل وقت سے نکلتے ہیں تو اور مضبوط ہو جاتے ہیں، آپ سب کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں، مشکل وقت سے نکلے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ کئی اراکین کی طبیعت ٹھیک نہیں تھی پھر بھی آئے، شکریہ ادا کرتا ہوں، ارکان اسمبلی نے آج یہاں پہنچنے کیلئے بڑی تکالیف کا سامنا کیا۔ انہوں نے کہا کہ قومیں نظریے سے ہٹ جائیں تو تباہ ہو جاتی ہیں، ہماری لیڈر شپ کو پتہ ہونا چاہیے کہ پاکستان ایک عظیم خواب تھا۔

 وزیراعظم نے کہا کہ زرداری دنیا بھر میں 10 پرسنٹ سے مشہو رہے، اس پر فلمیں بنی ہوئی ہیں، چڑھے ہوئے قرضے بیماری کی علامات ہیں، قوم کو اخلاقی تباہ کیا، چڑھے ہوئے قرضے بیماری کی علامات ہیں، قوم کو اخلاقی تباہ کیا، کوئی ملک کرپٹ لیڈر شپ کے ساتھ خوشحال نہیں رہ سکتا، کہا جاتا ہے ایک زرداری سب پر بھاری، وہ رشوت دیتا اس لیے وہ بھاری ہے؟۔

عمران خان نے مزید کہا کہ نواز شریف ملک کو 30 سال سے لوٹ کر ملک سے باہر بھاگا ہوا ہے، مولانا فضل الرحمان ہمیشہ سے دو نمبر آدمی ہے، این آر او لے کر دونوں نے دونوں ہاتھوں سے ملک لوٹا، سارے ڈاکو سمجھ رہے ہیں پریشر ڈالو یہ عمران خان این آر او دے دے گا، نواز شریف، زرداری سمیت اپوزیشن سمجھتی ہے مجھے بلیک میل کر لے گی، ڈاکو نواز شریف نے 30 سال ملک کو لوٹا اور بھاگ گیا، یوسف رضا گیلانی نے رقم واپس لانے کیلئے خط نہیں لکھا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ فیٹف کی گرے لسٹ میں ہماری وجہ سے نہیں، ن لیگ کے دور میں آئے، اپوزیشن کا ایک ہی ایجنڈا ہے کہ ان کو این آر او دیا جائے۔