تازہ ترین
  • بریکنگ :- الیکٹرانک ووٹنگ مشین کےاستعمال کےحوالےسےاہم پیشرفت
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن کےخط کےبعدحکومت کاالیکشن کمیشن سےرابطہ
  • بریکنگ :- چیف الیکشن کمشنرکی ڈپٹی چیئرمین پلاننگ کمیشن سےملاقات،ذرائع
  • بریکنگ :- ملاقات میں سیکرٹری الیکشن کمیشن بھی موجودتھے،ذرائع
  • بریکنگ :- الیکٹرانک ووٹنگ مشین اسٹوررومزکےحوالےسےبات چیت،ذرائع
  • بریکنگ :- ای وی ایم اسٹوررومزکیلئےمختلف مقامات کےحوالےسےگفتگوکی گئی
  • بریکنگ :- ایک ارب 20 کروڑکی لاگت سےفیلڈدفاترکی تعمیرپربات چیت،ذرائع
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن کی ڈیٹابیس اسٹوریج سےمتعلق معاملات پربات چیت،ذرائع
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن کاپروجیکٹ مینجمنٹ کیلئے 20افرادبھرتی کرنےکافیصلہ،ذرائع
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن کی ای وی ایم اسٹوریج کیلئےجگہ دینےکی منظوری،ذرائع
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن کی ڈپارٹمنٹل ڈیویلپمنٹ ورکنگ پارٹی نےمنظوری دی،ذرائع
  • بریکنگ :- ای وی ایم اسٹوریج کیلئے 2کروڑ 23لاکھ روپےکی منظوری دےدی،ذرائع
  • بریکنگ :- عمارت کیلئےپلاننگ کمیشن نےرقم کی منظوری نہیں دی،ذرائع
  • بریکنگ :- پلاننگ کمیشن کی جنوری،فروری میں اسٹوریج منصوبےکی منظوری دلانے کی یقین دہانی
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن کےمنصوبےکی این ای سی میں حمایت کریں گے،پلاننگ کمیشن
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن کو 3سے 4لاکھ الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں کواسٹورکرناہوگا،ذرائع
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن کےپنجاب میں فیلڈدفاترکیلئےفنڈزکی منظوری نہ ہوسکی،ذرائع

کورونا کیسز: لاک ڈاوؤن میں انٹر سٹی ٹرانسپوٹ پر پابندی شہریوں کیلئے وبال جان بن گئی

Published On 07 September,2021 12:22 pm

لاہور: (دنیا نیوز) کورونا کے بڑھتے کیسز کے پیش نظر لاک ڈاوؤن میں انٹر سٹی ٹرانسپوٹ پر پابندی شہریوں کیلئے وبال جان بن گئی، مسافر ٹرینوں کے ذریعے آمد و رفت جاری رکھے ہوئے ہیں، ریلوے سٹیشن پر مسافروں کے رش سے مشکلات بڑھ گئیں۔

حکومت پنجاب نے صوبہ بھر میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو کنٹرول کرنے کے لئے ٹرانسپورٹ بند کرنے کا اچانک فیصلہ کیا تو مسافر دوسرے شہروں میں پھنس گئے، ٹرانسپوٹ کا واحد ذریعہ ریل گاڑیاں رہ گئیں جس سے ریلوے اسٹینشوں پر رش بڑھ گیا۔ ٹرین کی ٹکٹ ملنا مشکل ہے اور اگر ٹکٹ مل جائے تو ٹرین میں مسافروں کا رش اس قدر کہ کورونا وائرس سے بچنا تو دور سانس لینا بھی محال ہے۔

ریلوے اسٹیشن کا پلیٹ فارم، ویٹنگ روم اور یا پھر پارکنگ کوئی ایسی جگہ نہیں جہاں مسافروں کا جم غفیر نہ ہو، مسافروں کا کہنا ہے کہ حکومت اگر بروقت ٹرانسپورٹ سروس بند کرنے کے حوالے سے بتا دیتی تو ہر شخص اپنی مطلوبہ منزل پر پہنچ جاتا۔ سٹیشن سپرنٹنڈنٹ شیخ مقصود نے کہا کہ رش زیادہ ہونے سے مشکلات پیش آ رہی ہیں۔

ٹرین پر چڑھنے کے مسافر نہ صرف ایک دوسرے سے دھکم پیل کرتے ہیں بلکہ گھتم گھتا بھی ہیں۔ مسافروں کا کہنا ہے کہ پنجاب حکومت کی ناقص پالیسی پر اس مصبیت کا سامنا کرنا پڑا اگر ٹرانسپورٹ سروس چلنے دی جاتی تو رش بسوں اور ٹرین میں شفٹ رہتا اور کورونا ایس او پیز پر عمل درآمد کروانا بھی آسان ہوتا۔