تازہ ترین
  • بریکنگ :- ایف اےٹی ایف کاپیرس میں اجلاس
  • بریکنگ :- پاکستان بلیک لسٹ نہیں ہوگا،صدرایف اےٹی ایف
  • بریکنگ :- پاکستان گرےلسٹ میں رہےگا،صدرایف اےٹی ایف
  • بریکنگ :- پاکستان نےنئےایکشن پلان پربہترعملدرآمدکیا،صدرایف اےٹی ایف
  • بریکنگ :- پاکستان نے 27میں سے 26 اہداف پورےکیے،مارکس پلیئر
  • بریکنگ :- پاکستان نےایشیاپیسفک گروپ کے 34میں سے 30اہداف پرعمل کیا،مارکس پلیئر
  • بریکنگ :- پاکستان میں مانیٹرنگ کانظام بہترہواہے،صدرایف اےٹی ایف
  • بریکنگ :- پاکستان کواینٹی منی لانڈرنگ قوانین پرعملدرآمدمزیدبہتربناناہوگا،مارکس پلیئر
  • بریکنگ :- منی لانڈرنگ کی روک تھام کیلئےمشترکہ کوششیں کررہےہیں،مارکس پلیئر
  • بریکنگ :- منی لانڈرنگ کی روک تھام میں پنڈوراپیپرزنےبھی معاونت کی،مارکس پلیئر
  • بریکنگ :- آف شورکمپنیوں میں سرمایہ کی جانچ پڑتال کی جارہی ہے،صدرایف اےٹی ایف
  • بریکنگ :- آف شورکمپنیوں میں منی لانڈرنگ کےسرمائےکاجائزہ لیں گے،مارکس پلیئر
  • بریکنگ :- مالی،اردن اورترکی نےمانیٹرنگ نظام بہترکیاہے،صدرایف اےٹی ایف
  • بریکنگ :- ترکی کومنی لانڈرنگ کیخلاف قوانین پرعملدرآمدبہترکرناہوگا،مارکس پلیئر

مغربی دنیا افغانستان کے معاملے پر پاکستان کو قربانی کا بکرا بنانا چاہتی ہے:قریشی

Published On 26 September,2021 11:52 pm

لندن:(دنیا نیوز) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ مغربی دنیا افغانستان کے معاملے پر پاکستان کو قربانی کا بکرا بنانا چاہتی ہے،افغانستان کے عوام جنگ سے تھک چکے ہیں اور وہ امن چاہتے ہیں جبکہ افغانستان میں صورتحال کے ذمہ دار وہاں کے سابق حکمران ہیں۔

لندن کے پاکستان ہاؤس میں عشائیہ میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے شرکت کی اور کہا کہ ہائی کمشنر اراکین پارلیمنٹ اور کمیونٹی رہنماؤں کو میرا سلام، میں وزیراعظم کی ہدایت کے مطابق اردو میں خطاب کروں گا۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ اکتیس وزرائے خارجہ سے ملاقات ہوئی، سات وزرائے خارجہ نے پاکستان کا دورہ کیا جبکہ نیو یارک میں بہت ساری ملاقاتیں ورچوئل تھیں۔

پاکستان کو برطانیہ کی جانب سے ریڈ لسٹ سے نکالے جانے پربات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس صورتحال پر پاکستان اور برطانیہ کے تعلقات متاثر ہو رہے تھے، لگتا تھا کہ سیاسی بنیادوں پر پاکستان کا نام ریڈ لسٹ میں شامل کیا گیا، ڈومینک راب سےپاکستان میں ملاقات ہوئی اور ہم نے کہا کہ پاکستان کو ریڈ لسٹ میں رکھنا سائنسی نہیں ہے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان کا نام ریڈ لسٹ میں شامل ہوا تو اراکین پارلیمنٹ نے پاکستان کا مقدمہ لڑا، اراکین برطانوی پارلیمنٹ کا شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں اور یہ جان کر خوشی ہوئی کہ برطانیہ میں حالات معمول کے مطابق لوٹ رہے ہیں۔