تازہ ترین
  • بریکنگ :- وزیراعلیٰ ہاؤس کے باہردھرنا، پولیس کا ایم کیو ایم کارکنوں پرلاٹھی چارج
  • بریکنگ :- کراچی:پولیس کی ایم کیوایم کارکنوں پرشیلنگ،متعدد زخمی
  • بریکنگ :- کراچی:ایم کیوایم کی بیشترخواتین کارکن بھی زخمی
  • بریکنگ :- کراچی:مشتعل مظاہرین کا پولیس پر پتھراؤ
  • بریکنگ :- پولیس نےایم کیوایم کےبیشترکارکنوں کوحراست میں لےلیا
  • بریکنگ :- کراچی:پولیس نےوزیراعلیٰ ہاؤس کےمرکزی گیٹ کوخالی کرا لیا
  • بریکنگ :- پولیس کارکن سندھ اسمبلی صداقت حسین پرلاٹھی چارج،ترجمان ایم کیوایم
  • بریکنگ :- پولیس نےصداقت حسین کوزخمی حالت میں حراست میں لےلیا،ترجمان

نواز شریف کو کورونا ویکسین کی جعلی ڈوز لگوانے والا شہری جرمنی میں مقیم

Published On 06 October,2021 08:13 pm

لاہور: (دنیا نیوز) سابق وزیراعظم نواز شریف کو کورونا وائرس کی ویکسین لگانے کے معاملے پر جعلی انٹری کروانے والا شہری جرمنی میں مقیم ہے۔ جرمنی میں مقیم نوید نامی شخص نے کوٹ سعید ہسپتال کے وارڈ بوائے کے ذریعے جعلی ویکسین کا اندراج کروایا۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم اور پاکستان مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف کے شناختی کارڈ پر جعلی ویکسین کی تفتیش کا معاملہ پر جعلی ویکسین کا اندراج کس نے کروایا دنیا نیوز نے سراغ لگا لیا۔

ذرائع کے مطابق اینٹی کرپشن کی تحقیقات میں گرفتار ملزمان نے سب کچھ اگل دیا۔ جرمنی میں بیٹھے نوید نامی شخص نے کوٹ خواجہ سعید ہسپتال رابطہ کیا، ہسپتال کے وارڈ بوائے عادل رفیق سے جعلی ویکسین کی جعلی انٹری کروائی۔

تفتیش میں انکشاف ہوا کہ ہسپتال انتظامیہ نے چوکیدار ابو الحسن کو ڈیٹا انٹری آپریٹر بنا رکھا تھا،عادل رفیق نے چوکیدار ابوالحسن سے نواز شریف کی جعلی انٹری کروائی، دونوں ملازمین جعلی اندراج کے 1500 سے 2500 روپے لیتے تھے، چوکیدار ابوالحسن کو سینئر سینٹری انسپکٹر نے ڈیٹا اینٹری آپریٹر بنا رکھا تھا۔

تفتیش میں انکشاف ہوا کہ سینئر سینٹری انسپکٹر خالد شاہ نے ایم ایس کو اس بابت نہیں بتایا، خالد شاہ نے ڈیٹا اینٹری آپریٹر بنانے کے ایم ایس سے دستخط کروا لیے۔

سابق ایم ایس نے اپنے بیان میں کہا کہ ڈیوٹی روسٹر روزانہ آتا ہے، اس پر عہدہ نہیں لکھا ہوتا، سینئر سنٹری انسپکٹر نے بغیر بتائے روٹین دستخط کروا لیے، جرمنی میں مقیم نوید بھگت پورہ لاہور کا رہائشی ہے۔ اینٹی کرپشن لاہور ریجن اے نے تمام عہدیداروں کے بیانات قلمبند کر لیے، سابق ایم ایس، موجودہ ایم ایس، اے ایم ایس، بی ایم سے کے بیان ریکارڈ ہوئے۔

ذرائع کے مطابق اینٹی کرپشن نے عادل سے 12600 اور ابوالحسن سے 7200 ریکور کیے،دونوں کے موبائل فونز فرانزک ٹیسٹ کیلئے بھجوا دئیے گئے۔