تازہ ترین
  • بریکنگ :- آج میڈیا کے سامنے وزیر بلدیات نے ہمارے مطالبات تسلیم کیے،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- ہم اس معاہدے پر عمل بھی کروائیں گے،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- کراچی:صوبائی فنانس کمیشن کے قیام پر رضامندہیں،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- مئیر اور ٹاؤن چیئرمین کمیشن کے ممبر ہوں گے،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- سندھ حکومت تعلیمی ادارے اور اسپتال بلدیہ کو واپس کرنے پر تیار،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- آکٹرائے اور موٹر وہیکل ٹیکس میں سےبھی بلدیہ کراچی کو حصہ ملے گا،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- کراچی: مئیر کراچی واٹر بورڈ کے چیئرمین ہوں گے،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- بلدیہ کو خود مختار بنانے کیلئےمالی وسائل دینےپر سندھ حکومت تیار، ناصر حسین
  • بریکنگ :- کراچی: بلدیاتی قانون پر جماعت اسلامی اور سندھ حکومت کے مذاکرات کامیاب
  • بریکنگ :- سندھ حکومت اور جماعت اسلامی کےدرمیان تحریری معاہدہ
  • بریکنگ :- جماعت اسلامی کا دھرنا ختم کرنے کا اعلان،کارکنان گھروں کو روانہ
  • بریکنگ :- پیپلز پارٹی اور جماعت اسلامی میئر کراچی کو بااختیار بنانےپر متفق
  • بریکنگ :- آپ کو تاریخی جدوجہد کرنے پرمبارکباد پیش کرتا ہوں،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- آپ نے ساڑھے تین کروڑ عوام ہی نہیں پورے ملک کو حیران کردیا،حافظ نعیم
  • بریکنگ :- ہم استقامت کے ساتھ 29 دن دھرنے پر بیٹھے رہے،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- کراچی:سندھ حکومت اور جماعت اسلامی نے مل کر ایک مسودہ بنایا ہے،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- کراچی:2021 کا ترمیمی بل اب ختم ہو جائےگا،حافظ نعیم الرحمان

برطانوی شخص کو کامیابی کیساتھ تھری ڈی پرنٹڈ آنکھ لگادی گئی

Published On 29 November,2021 08:06 pm

لندن:(ویب ڈیسک)ٹیکنالوجی کی دنیا میں ہونیوالی جدت نے ناممکن کام کو بھی ممکن کردکھانے کے حیران کن کمالات کئے ہیں ،ایسے ہی برطانیہ میں ایک شخص کو کامیابی کے ساتھ تھری ڈی پرنٹڈ آنکھ لگا دی گئی۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق 47 سالہ انجنیئر سٹیور ورز کو تھری ڈی پرنٹر کی مدد بائیں آنکھ لگائی گئی۔لندن کے مورفیلڈس آئی ہسپتال میں برطانوی شخص تھری ڈی آنکھ پانے والے دنیا کے پہلے شخص ہیں۔

ہسپتال کی جانب سے بتایا گیا کہ پروستھیٹک پہلی مکمل طور پر ڈیجیٹل پروستھیٹک آنکھ ہے جو مریض کےلیے بنائی گئی ہے جبکہ یہ آنکھ متبادل کے مقابلے میں زیادہ حقیقی ہے۔

روایتی پروستھیٹکس لگانے کےلیے آنکھ کے حلقے کا ایک سانچہ لیا جاتا تھا جبکہ تھری ڈی پروستھیٹک آنکھ کےلیے حلقے کو ڈجیٹلی اسکین کیا جاتا ہے تاکہ تفصیلی تصویر ملے۔

دیگر پروستھیٹک آنکھیں میں دراصل ایک ڈِسک پر ہاتھوں سے پُتلی پینٹ کی ہوئی ہوتی ہے اور اُست آنکھ کے حلقے میں لگا دیا جاتا ہے۔تاہم ان ڈیزائن روشنی کو آنکھ کی گہرائی میں جانے سے روکتا ہے اورحقیقی لگنے کے ساتھ، آنکھ لگنے کا عمل کم تکلیف دہ ہے۔

رپورٹس کے مطابق ورز کی ٹھیک آنکھ کو بھی سکین کیا گیا تھا تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جاسکے کہ ان کی دونوں آنکھیں ایک جیسی لگ رہی ہیں۔