تازہ ترین
  • بریکنگ :- لانگ مارچ کےدوران توڑپھوڑ،سرکاری املاک کونقصان پہنچانےکاکیس
  • بریکنگ :- پی ٹی آئی کے 13 رہنماؤں نےایک اورمقدمےمیں ضمانت دائرکردی
  • بریکنگ :- حماداظہر،یاسمین راشد،عندلیب عباس،جمشیداقبال چیمہ عدالت پیش
  • بریکنگ :- لاہور:اعجازچودھری،ندیم عباس،اسلم اقبال،محمودالرشیدبھی پیش
  • بریکنگ :- پی ٹی آئی رہنماؤں نےتھانہ شفیق آبادمیں درج مقدمہ پرضمانتیں دائرکیں

چین کے دارالحکومت بیجنگ میں نئے کورونا کیسز سامنے آنے پر کئی علاقے سیل

Last Updated On 13 June,2020 07:17 pm

بیجنگ: (ویب ڈیسک) چین کے دارالحکومت بیجنگ میں کورونا کیسز سامنے آنے پر کئی علاقوں میں لاک ڈاؤن کر دیا گیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق بیجنگ کے جنوبی علاقے میں واقع گوشت مارکیٹ سے کورونا کے کیسز سامنے آنے پر 11 رہائشی علاقوں میں لاک ڈاؤن کردیا گیا ہے۔

خبر رساں ادارے کے مطابق جنوبی بیجنگ کی گوشت مارکیٹ سے کورونا وائرس کے 7 کیسز رپورٹ ہوئے تھے جن میں سے 6 کی تصدیق ہوچکی ہے جس کے بعد متاثرہ مارکیٹ کے قریب بچوں کے 9 اسکولوں کو فوری بند کردیا گیا ہے۔

مقامی گوشت مارکیٹ کے چیئرمین نے مارکیٹ سے کیسز رپورٹ ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ وائرس درآمد شدہ مچھلی کو کاٹنے کے بورڈز سے سامنے آیا ہے۔

مقامی میڈیا کا بتانا ہےکہ حکام نے کیسز سامنے آنے کے بعد گوشت کی دو مارکیٹوں کو فوری طور پر بند کردیا ہے جب کہ راتوں رات سپر مارکیٹس اور دیگر مارٹس سے درآمدی مچھلی کا اسٹاک ہٹوادیا گیا ہے۔

مقامی میڈیا کے مطابق جن دو گوشت مارکیٹوں کو بند کیا گیا وہاں پر پولیس کی بھاری نفری کو بھی تعینات کیا گیا ہے۔ بیجنگ میں دو ماہ بعد جمعرات کے روز کورونا کا نیا کیس رپورٹ ہوا اور متاثرہ شخص کی شہر سے باہر کوئی ٹریول ہسٹری موجود نہیں ہے جب کہ متاثرہ شخص میں کورونا کی تشخیص کے بعد ہی اگلے روز مزید 2 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی۔

مقامی میڈیا کے مطابق چین میں ہفتے کے روز تک کورونا کے 11 کیسز رپورٹ ہوچکے ہیں جن میں سے 6 کیسز دارالحکومت بیجنگ کے مقامی ہیں۔

واضح رہے کہ عالمگیر وبا کورونا وائرس کا آغاز گزشتہ برس دسمبر میں چین کے شہر ووہان سے ہوا تھا جس کے پھیلنے کی اب تک کوئی حتمی وجہ سامنے نہیں آسکی ہے تاہم اس بات کا شبہ ظاہر کیا جارہا ہےکہ یہ وائرس ووہان شہر میں واقع گوشت مارکیٹ سے پھیلا جہاں چمگادڑوں، سانپ اور چوہوں کا گوشت بھی فروخت کیا جاتا تھا۔