تازہ ترین
  • بریکنگ :- گریڈ 20 کےحسن رضا سعیدکی گریڈ 21 میں ترقی
  • بریکنگ :- پاکستان ایڈمنسٹریٹوسروس کے 7افسران کی گریڈ 21 میں ترقی
  • بریکنگ :- چیف کمشنر اسلام آباد عامر علی احمد کی گریڈ 21 میں ترقی
  • بریکنگ :- عامر علی احمد چیف کمشنر اسلام آباد کےعہدے پر کام جاری رکھیں گے
  • بریکنگ :- گریڈ 20 کےعلی طاہراورکیپٹن (ر)اسداللہ خان کی گریڈ21 میں ترقی
  • بریکنگ :- گریڈ 20 کے محمد حسن اقبال اورفوادہاشم ربانی کی گریڈ 21 میں ترقی
  • بریکنگ :- زاہد علی عباسی اور افتخار علی ساہو کی گریڈ 21 میں ترقی
  • بریکنگ :- اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نے ترقیوں کانوٹیفکیشن جاری کردیا
  • بریکنگ :- وزیراعظم نے اعلیٰ افسران کی ترقیوں کی منظوری دے دی
  • بریکنگ :- وزیراعظم نےسینٹرل سلیکشن بورڈکی سفارشات پرترقیوں کی منظوری دی
  • بریکنگ :- سیکرٹریٹ گروپ گریڈ 20 کے 5 افسران کی گریڈ 21 میں ترقی
  • بریکنگ :- وزارت خزانہ میں جوائنٹ سیکرٹری طاہر نور کی گریڈ 21 میں ترقی
  • بریکنگ :- طاہر نوروزارت خزانہ میں سینئر جوائنٹ سیکرٹری تعینات
  • بریکنگ :- اسٹیبلشمنٹ ڈویژن میں جوائنٹ سیکرٹری شعیب اکبرکی گریڈ 21 میں ترقی
  • بریکنگ :- وزیراعظم آفس میں تعینات علی اصغر کی گریڈ 21 میں ترقی
  • بریکنگ :- ڈی جی ایف پی ایس سی سبینہ قریشی کی گریڈ 21 میں ترقی

تیز ترین باؤلنگ،حسن علی اور وسیم جونیئر نے شعیب اختر کا ریکارڈ توڑ دیا؟

Published On 19 November,2021 06:21 pm

لاہور:(ندیم میاں) بنگلہ دیش کے خلاف پہلے ٹی 20میچ میں جہاں شعیب ملک کا رن آؤٹ موضوع بحث بنا رہا وہیں پر قومی ٹیم کے نوجوان آل راؤنڈر محمد وسیم جونیئر کی 221.9 کلو میٹر فی گھنٹہ اور فاسٹ باؤلر حسن علی کی 219 کلو میٹر فی گھنٹہ کی رفتار کی کرائی گئی گیند نے مداحوں کی توجہ مبذول کرائے رکھی اور سوشل میڈیا پر صارفین یہ سمجھنے لگے کہ وسیم جونیئر اور حسن علی نے شعیب اختر کا ریکارڈ توڑ دیا ہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ٹی 20ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں آسٹریلیا کے خلاف میھتیو ویڈ کا کیچ چھوڑنے والے حسن علی نے بنگلہ دیش کے خلاف اپنے پہلے ٹی 20میچ میں 3وکٹیں حاصل کرکے بہترین کھلاڑی کا ایوارڈ پاکر زبردست کم بیک کیا اور ناقدین کے منہ اپنی کارکردگی کی بنیاد پر بند کردیئے۔

بنگلہ دیش کے خلاف پہلے ٹی 20میچ میں دو ایسے واقعات تھے جو کو سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہوئے جن میں ایک شعیب ملک کا مضحکہ خیز انداز میں رن آؤٹ ہونا تھا جبکہ دوسرا حسن علی کی 219کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے کرائی گئی گیند تھی۔

ہوا کچھ یوں کہ بنگلہ دیش کے خلاف پاکستان کی باؤلنگ کے دوران گیند بازی کی رفتار کو ماپنے والی ٹیکنالوجی میں خرابی کے باعث حسن علی کی کرائی گیند کی رفتار 219کلومیٹر فی گھنٹہ نوٹ کی گئی جبکہ سپنر محمد نواز کی ایک گیند 145اعشاریہ 6 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے نوٹ کی گئی۔

حسن علی کی جانب سے 200 سے زائدکلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے کرائی گئی گیند پر سوشل میڈیا پر دلچسپ میمز کا سلسلہ رہا اور صارفین کی جانب سے مزاحیہ انداز میں تبصرے کئے جبکہ کچھ نے سابق سپیڈ سٹار شعیب اختر کی گیند کا ریکارڈ توڑنے کے بھی تبصرے کر ڈالے۔

دوسری جانب وسیم جونیئر کی گیند کی سپیڈ تقریباً 222کلو میٹر فی گھنٹہ دکھا دی گئی،اسپیڈ گن کی خرابی سے گیند کی رفتار کو زیادہ دکھایا جاتا رہا ، پاکستان کے باؤلر وسیم جونیئر نے جب گیند کی تو سپیڈ گن نےتقریباً 222کلو میٹر فی گھنٹہ رفتار دکھائی ، اسی طرح حسن علی کی گیند219 کلو میٹر فی گھنٹہ دکھائی گئی ، میچ دیکھنے والے شائقین بھی دلچسپ غلطیوں کو دیکھ کر محظوظ ہوتے رہے ۔

یاد رہے کہ پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق فاسٹ باؤلر شعیب اختر نے 161اعشاریہ 3 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے گیند کراکر ورلڈ ریکارڈ اپنے نام کیا تھا جو کہ آج تک کوئی دنیا کا دوسرا باؤلر نہیں توڑ سکا،یہ گیند 22فروری 2003 کو ورلڈ کپ میچ میں راولپنڈی ایکسپریس نے انگلش بیٹسمین نک نائٹ کو کیپ ٹاؤن میں کرائی تھی۔