تازہ ترین
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکےمزید567 کیس رپورٹ،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کورونامریضوں کی تعداد 12 لاکھ 67 ہزار 393 ہوگئی
  • بریکنگ :- ملک میں کوروناکےایکٹوکیسزکی تعداد 24 ہزار 386 ہے،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 24 گھنٹےکےدوران کوروناسےمزید 16 اموات
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کوروناسےجاں بحق افرادکی تعداد 28 ہزار 344 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکے 864 مریض صحت یاب،این سی اوسی
  • بریکنگ :- کوروناسےصحت یاب افرادکی مجموعی تعداد 12 لاکھ 14 ہزار 663 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےکےدوران 39 ہزار 200 کوروناٹیسٹ کیےگئے،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 2 کروڑ 4 لاکھ 5 ہزار 357 کوروناٹیسٹ کیےجاچکے
  • بریکنگ :- کوروناسےمتاثر 1704 مریضوں کی حالت تشویشناک،این سی اوسی
  • بریکنگ :- پنجاب 4 لاکھ 38 ہزار 636،سندھ میں 4 لاکھ 66 ہزار 945 کیسز،این سی اوسی
  • بریکنگ :- خیبرپختونخواایک لاکھ 77 ہزار 240،بلوچستان میں 33 ہزار 159 کیس رپورٹ
  • بریکنگ :- اسلام آباد ایک لاکھ 6 ہزار 615،گلگت بلتستان میں 10 ہزار 376 کیسز
  • بریکنگ :- آزادکشمیرمیں کورونامریضوں کی تعداد 34 ہزار 422 ہوگئی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک میں کورونامثبت کیسزکی شرح 1.44 فیصدرہی،این سی اوسی

ہر سال 25 ہزار پاکستانی خواتین خون کی کمی کے باعث جان کی بازی ہارنے لگیں

Published On 09 October,2021 09:49 pm

لاہور: (دنیا نیوز) خواتین میں خون کی کمی صحت کے مسائل میں سے ایک اہم مسئلہ ہے ۔ ہر سال پاکستان میں 25 ہزار خواتین خون کی کمی کے باعث جان کی بازی ہار جاتی ہیں۔ جینکس فارما نے اہم مسئلے کی آگاہی کے لیے خصوصی اہتمام کیا۔ ماہرین نے ہیموگلوبن کی کمی پر قابو پانے اور متوازن غذا کے استعمال پرآگاہی فراہم کی۔

جینکس فارما کی جانب سے پی سی ہوٹل لاہور میں خواتین میں خون کی کمی کے حوالے تقریب کا اہتمام کیا گیا، پروفیسر ارشد چوہان، پروفیسر عالیہ بشیر، پروفیسر زہرہ خانم، پروفیسر عائشہ ملک، پروفیسر فرحت ناز اور ڈائریکٹر مارکیٹنگ جینکس فارما سید اظہار امام سمیت ڈاکٹرز کی کثیر تعداد نے شرکت کی ۔ حاملہ خواتین میں ہیموگلوبن کی کمی کے حوالے سے آگاہی لیکچرز دئیے گئے

پروفیسر ارشد چوہان نے بتایا کہ پاکستان میں پیچیدگیوں کے باعث ماں بچہ کی شرح اموات میں اضافہ ہو رہا ہے، ہر سال 25 ہزار خواتین خون کی کمی کے باعث جاں بحق ہو جاتی ہیں۔

پروفیسر عائشہ ملک کا کہنا تھا کہ پاکستان میں 12 فیصد مرد جبکہ 50 فیصد خواتین خون کی کمی کا شکار ہیں۔

ماہرین کا کہنا تھاکہ اچھی خوراک اور آگاہی کے ذریعے ہیموگلوبن کی کمی پر قابو پایا جا سکتا ہے۔