تازہ ترین
  • بریکنگ :- ایف اےٹی ایف کاپیرس میں اجلاس
  • بریکنگ :- پاکستان بلیک لسٹ نہیں ہوگا،صدرایف اےٹی ایف
  • بریکنگ :- پاکستان گرےلسٹ میں رہےگا،صدرایف اےٹی ایف
  • بریکنگ :- پاکستان نےنئےایکشن پلان پربہترعملدرآمدکیا،صدرایف اےٹی ایف
  • بریکنگ :- پاکستان نے 27میں سے 26 اہداف پورےکیے،مارکس پلیئر
  • بریکنگ :- پاکستان نےایشیاپیسفک گروپ کے 34میں سے 30اہداف پرعمل کیا،مارکس پلیئر
  • بریکنگ :- پاکستان میں مانیٹرنگ کانظام بہترہواہے،صدرایف اےٹی ایف
  • بریکنگ :- پاکستان کواینٹی منی لانڈرنگ قوانین پرعملدرآمدمزیدبہتربناناہوگا،مارکس پلیئر
  • بریکنگ :- منی لانڈرنگ کی روک تھام کیلئےمشترکہ کوششیں کررہےہیں،مارکس پلیئر
  • بریکنگ :- منی لانڈرنگ کی روک تھام میں پنڈوراپیپرزنےبھی معاونت کی،مارکس پلیئر
  • بریکنگ :- آف شورکمپنیوں میں سرمایہ کی جانچ پڑتال کی جارہی ہے،صدرایف اےٹی ایف
  • بریکنگ :- آف شورکمپنیوں میں منی لانڈرنگ کےسرمائےکاجائزہ لیں گے،مارکس پلیئر
  • بریکنگ :- مالی،اردن اورترکی نےمانیٹرنگ نظام بہترکیاہے،صدرایف اےٹی ایف
  • بریکنگ :- ترکی کومنی لانڈرنگ کیخلاف قوانین پرعملدرآمدبہترکرناہوگا،مارکس پلیئر

وزیراعلی بلوچستان جام کمال کی ایک مرتبہ پھرملازمین سے دھرناختم کرنے کی اپیل

Published On 04 April,2021 03:36 pm

کوئٹہ: (دنیا نیوز) وزیراعلی بلوچستان جام کمال نے ایک مرتبہ پھرملازمین سے دھرناختم کرنے کی اپیل کر دی، کہتے ہیں ملازمین سے التجاء ہے کہ صوبے کی موجودہ معاشی صورتحال کو مدنظر رکھتے ہوئے اپنے فیصلوں پر نظرثانی کریں۔

وزیراعلی بلوچستان جام کمال نے ایک بار پھرسرکاری ملازمین سے دھرنا ختم کرنے کی اپیل کی ہے، ملازمین نے تنخواہوں میں 25فیصد اضافے کے حق میں ہاکی چوک پر دھرنا دیا جو آج ساتویں روز میں داخل ہوگیا ہے۔

وزیراعلی کا یہ کہنا ہے کہ موجود صورتحال میں میری ذاتی کوئی آنااور سیاست شامل نہیں ہے۔ میرے لئے سیاسی فیصلہ کرنا بہت آسان ہے جس سے موجود حکومت کی واہ واہ بھی ہوسکتی ہے لیکن میں ایک سیاسی فیصلہ کرکے صوبے کوبربادی کی جانب نہیں دھکیل سکتا۔

انہوں نے کہا کہ صوبائی حالات کو مدنظررکھتے ہوئے ہمیں سنجیدگی کا مظاہرہ کرنا ہوگا۔ بلوچستان ایک پسماندہ صوبہ ہے جس کی اپنی ضروریات بہت مشکل سےپوری ہورہی ہیں۔ اگرملازمین کے تنخواہیں ہرسال بڑھائی جائے تو ترقی اور خوشحالی کا پہیہ رک جائے گا۔ تنخواہوں کے بڑھنے کے طرف گئے تو حکومت کو پبلک ریلیف دینا مشکل ہوجائے گا۔ سرکاری ملازمین صحیح اندازمیں اپنا حق ادا کریں توایک مرتبہ نہیں دو مرتبہ حکومت تنخواہیں بڑھا دے گی۔ ٹیچرز، ڈاکٹرز سمیت دیگر سرکاری ملازمین کابڑا فیصدحصہ ذمے داریوں سے غافل ہے۔ کاش ایسی تحاریک اچھی تدریس، صحت اورعوام کی خدمت کےلئے چلائی جاتیں تو مجھے خوشی ہوتی۔ دھرنے میں کورونا وائرس یا دہشتگردی سے نقصان ہوا تو دھرنے کے ذمہ داروں کیخلاف کارروائی کرینگے۔