تازہ ترین
  • بریکنگ :- حکومت سنبھالی توملک مشکلات کاشکارتھا،پرویزخٹک
  • بریکنگ :- وزیراعظم عمران خان نےملک کومشکلات سےنکالا،پرویزخٹک
  • بریکنگ :- ماضی کی حکومتوں نےآئی ٹی پرتوجہ نہیں دی،پرویزخٹک
  • بریکنگ :- ملک نوکریاں دینےسےنہیں چلتا،وزیردفاع پرویزخٹک
  • بریکنگ :- اپوزیشن والےاتناجھوٹ بولتےہیں کہ سچ لگتاہے،پرویزخٹک
  • بریکنگ :- وزیراعظم کےدرست فیصلوں سےمعیشت کونقصان نہیں پہنچا،پرویزخٹک
  • بریکنگ :- موجودہ حکومت نےکسان کوبغیرسودقرض کی سہولت دی،پرویزخٹک
  • بریکنگ :- الزامات لگانےوالےاپنےگریبان میں جھانکتےنہیں،پرویزخٹک
  • بریکنگ :- ہرکوئی سرکاری نوکری حاصل کرناچاہتاہے،پرویزخٹک
  • بریکنگ :- امریکا،یورپ سمیت پوری دنیامیں مہنگائی ہے،پرویزخٹک
  • بریکنگ :- اپوزیشن کاڈرامہ اب نہیں چلےگا،وزیردفاع پرویزخٹک

سینیٹ اجلاس: شہریوں کو کورونا ویکسین مفت فراہم کرنیکی قرارداد منظور

Published On 05 April,2021 05:09 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) سینیٹ اجلاس میں حکومتی ارکان کی مخالفت کے باوجود شہریوں کو کورونا ویکسین مفت فراہم کرنے کی قرارداد منظور کر لی گئی ہے۔

شہریوں کو کورونا ویکسین کی مفت فراہمی سے متعلق قرارداد کے حق میں 43 اور مخالفت میں 31 ووٹ آئے۔ قرارداد سینیٹر کامران مرتضیٰ نے پیش کی۔

وزیر مملکت علی محمد کا کہنا تھا کہ ایک شرط پر اس کی حمایت کریں گے کہ اس بیماری پر سیاست نہ کی جائے۔ حکومت رات دن اس بیماری کے خلاف اقدامات کر رہی ہے۔ ماضی کی حکومتوں نے ہمیں کون سی سویڈن اور ڈنمارک والی صورتحال دی تھی۔

قائد ایوان سینیٹر شہزاد وسیم کا کہنا تھا کہ قرارداد پیش کرنے کا ایک طریقہ کار ہوتا ہے۔ اس قرارداد میں تو حکومت کو چارج شیٹ کیا گیا ہے۔

قائد حزب اختلاف یوسف رضا گیلانی کا کہنا تھا کہ کورونا سے ملک کا وزیراعظم بھی محفوظ، نہیں رہ سکا، غریب آدمی کورونا ویکسین کے اخراجات برداشت نہیں کر سکتا۔ یا تو کورونا ویکسین فری کر دی جائے یا مارکیٹ ریٹ پر دی جائے۔

سینیٹر شیری رحمان کا کہنا تھا کہ ہمیں بتایا جائے کہ پاکستان نے اب تک کتنی ویکیسن درآمد کی ہے۔ این سی او سی میں وعدے ہو جاتے ہیں، ڈریپ ابھی تک قیمت کا تعین کر رہا جبکہ عالمی ادارہ صحت نے کہا ہے کہ پاکستان کی ٹیسٹنگ سب سے کم ہے۔