تازہ ترین
  • بریکنگ :- سکردو:وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالدخورشیدکی پریس بریفنگ
  • بریکنگ :- آرٹیکل ون میں شامل ہوئےبغیرگلگت بلتستان بااختیارصوبہ بنےگا،خالدخورشید
  • بریکنگ :- جی بی کیلئےقومی اسمبلی میں چار،سینیٹ میں 8نشستیں مختص ہوں گی،وزیراعلیٰ
  • بریکنگ :- جی بی سےمنتخب قومی اسمبلی ممبروزیراعظم پاکستان بھی بن سکتاہے،خالدخورشید
  • بریکنگ :- عبوری آئینی صوبےکیلئےوفاق کی اپوزیشن جماعتوں سےتعاون کی امیدہے،وزیراعلیٰ
  • بریکنگ :- گلگت بلتستان میں لینڈریفارمزکمیشن بنایاگیاہے،وزیراعلیٰ گلگت بلتستان
  • بریکنگ :- لینڈمافیااورمحکمہ مال کےکرپٹ اہلکاروں کونشان عبرت بنائیں گے،خالدخورشید
  • بریکنگ :- 5 سال میں نیاگلگت بلتستان دےکرجائیں گے،وزیراعلیٰ گلگت بلتستان
  • بریکنگ :- 150 میگاواٹ بجلی کےمنصوبوں پرکام شروع کردیا،وزیراعلیٰ گلگت بلتستان
  • بریکنگ :- ہرضلع کےاسپتالوں میں آئی سی یوبنائیں گے،وزیراعلیٰ خالدخورشید
  • بریکنگ :- سکردو:2میڈیکل کالجزبھی قائم کیےجائیں گے،وزیراعلیٰ گلگت بلتستان

ریاست کو کوئی ڈکٹیٹ نہیں کرسکتا: وزیر مملکت فرخ حبیب

Published On 28 October,2021 03:09 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) وزیر مملکت فرخ حبیب کا کہنا ہے کہ ریاست کو کوئی ڈکٹیٹ نہیں کرسکتا، جب سڑکیں بلاک کی جائیں اور املاک کو نقصان پہنچایا جائے، اس وقت کوئی معاہدہ نہیں رہتا، معاہدہ اس وقت ہوتا ہے جب معاہدے کی پاسداری ہوتی ہے۔

وزیر مملکت اطلاعات و نشریات فرخ حبیب نے اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پولیس اہلکاروں کو سیدھی گولیاں ماری جا رہی ہیں، ان کے گھروں میں صف ماتم بچھا ہے، ہم کالعدم جماعت کی ہر جائز بات سننے کو تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی، ن لیگ اکاؤنٹس کی تفصیلات کیلئے درخواست دی تھی، 3 سال میں ن لیگ کے اکاؤنٹس میں 45 کروڑ روپے آئے، جماعتوں کے اکاؤنٹس کی جانچ پڑتال الیکشن کمیشن کی ذمہ داری ہے۔

فرخ حبیب کا کہنا تھا کہ عدالت کا فیصلہ تھا سیاسی جماعتوں کے اثاثوں کی چھان بین کریں، سیاسی جماعتیں اثاثوں کے بارے میں ریکارڈ الیکشن کمیشن میں جمع کرانے کی پابند ہیں، 4 روز سے فنانشل ایکسپرٹ ن لیگ اور پیپلز پارٹی کے اکاؤنٹس کا جائزہ لے رہے ہیں، ہماری ٹیم کے مطابق 45 کروڑ روپے کا ڈیٹا نہیں ملا، 3 کروڑ روپے بھون داس نامی شخص نے دیئے ہوئے ہیں، پیسہ بینک میں کراس چیک کے ذریعے آیا ہوگا، اس کی رسیدیں نہیں ہیں، پانامہ کیس میں فلیٹ کی مالیت مان لیں لیکن رسیدیں نہ دیں، رسیدوں کے نام پر ن لیگ نے قطری خط پیش کر دیا۔