تازہ ترین
  • بریکنگ :- لانگ مارچ کےدوران توڑپھوڑ،سرکاری املاک کونقصان پہنچانےکاکیس
  • بریکنگ :- پی ٹی آئی رہنماجمشیدچیمہ،حماداظہر،یاسمین راشد،شفقت محمودعدالت پیش
  • بریکنگ :- لاہور:اعجازچودھری،محمودالرشید،اسلم اقبال اوردیگربھی عدالت پیش
  • بریکنگ :- لاہور:ملزمان کیخلاف تھانہ شاہدرہ اورگلبرگ میں مقدمات درج ہیں

بلوچستان اور خیبرپختونخوا میں سکیورٹی فورسز کا آپریشن، 12 دہشتگرد ہلاک

Published On 23 February,2022 08:25 pm

راولپنڈی: (دنیا نیوز) بلوچستان اور خیبرپختونخوا میں امن دشمنوں کیخلاف کارروائی کرتے ہوئے سکیورٹی فورسز نے 12 ملک دشمنوں کو ہلاک کر دیا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی طرف سے جاری کردہ بیان کے مطابق سیکیورٹی فورسز نے بلوچستان میں ہوشاب کے علاقے میں دہشت گردوں کی کیمپ اور ٹھکانے میں موجودگی کی اطلاع پر بلوچستان میں غیرملکی سپانسرڈ امن کے دشمنوں کو گرفتار کرنے کے لیے کارروائی کی، گھیرے میں آنے پر دہشت گردوں نے بھاگنے کی کوشش کی، اس دوران اندھا دھند فائرنگ کا تبادلہ ہوا۔

بیان کے مطابق فائرنگ کے تبادلے میں سکیورٹی فورسز نے 10 دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا۔ مارے جانے والوں میں اہم کمانڈر ماسٹر آصف عرف مکیش شامل ہے۔ ہلاک ہونے والے دہشتگرد تربت، پسنی کے حالیہ دہشتگردی کے واقعات میں ملوث تھے۔

آپریشن کےدوران بھاری تعداد میں ہتھیار اور گولیاں برآمد کی گئیں، یہ ہتھیار سیکیورٹی فورسز پر حملوں میں استعمال ہونا تھے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق دہشتگردوں اور ان کے سہولت کاروں کے خاتمے کیلئے آپریشن جاری رہیں گے، بلوچستان میں امن وترقی کاعمل سبوتاژ ہونے نہیں دیں گے۔

سکیورٹی فورسز کا ڈی آئی خان میں آپریشن، 2 دہشتگرد ہلاک

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر ) کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق ڈی آئی خان کی تحصیل کولاچی میں سکیو رٹی فورسز نے خفیہ اطلاعات پر آپریشن کیا ہے، آپریشن کے دوران فائرنگ کے تباد لے میں2 دہشتگرد مارے گئے۔

 آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ ہلاک دہشتگردوں میں فضل الرحمان عرف خیری اور مہران شامل ہیں، ہلاک دہشت گرد سیکیورٹی فورسز پر حملوں میں ملوث تھے،فضل الرحمان مقامی گاؤں لونی اور مہران دوری نامی گاؤں کا رہائشی تھا۔

ترجمان پاک فوج کا کہنا ہے کہ آپریشن کے دوران دہشت گردوں کے ٹھکانے سے بڑی تعداد میں اسلحہ برآمد ہوا ہے، مقامی لوگوں نے سیکیورٹی فورسز کے آپریشن کو سراہا جبکہ مقامی لوگوں نے دہشت گردی کے عفریت کے خاتمے کے لیے مکمل حمایت کا بھی اظہار کیا۔

 

کوہلو میں سکیورٹی فورسز کا آپریشن، فائرنگ کے تبادلے میں کیپٹن حیدر عباس شہید

21 فروری کو آئی ایس پی آر کی طرف سے جاری کردہ بیان کے مطابق  سکیورٹی فورسز نے دہشتگردوں کی موجودگی کی اطلاعات پر بلوچستان کے علاقے کوہلو کو گھیرے میں لیا تو ملک دشمنوں کی جانب سے فائرنگ شروع کی گئی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق شدید فائرنگ کے تبادلے کے دوران کیپٹن حیدر عباس وطن پر قربان ہوگئے، شہید کیپٹن کا تعلق سپیشل سروسز گروپ (ایس ایس جی) سے تھا۔ شہید کیپٹن حیدر عباس کی نماز جنازہ کراچی میں ادا کی گئی، کور کمانڈر کراچی لیفٹیننٹ جنرل محمد سعید ، حاضر سروس افسران، جوانوں، شہید کے لواحقین اور لوگوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی اور شہید کو مکمل فوجی اعزاز کے ساتھ سپرد خاک کیا گیا۔

سکیورٹی فورسز کا آپریشن، کیچ دہشتگردی میں ملوث 6 ملک دشمن ہلاک

16 فروری کو پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی) میجر جنرل بابر افتخار کی طرف سے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری کردہ بیان کے مطابق سیکیورٹی فورسز نے بلوچستان کے علاقے بلیدہ کی انجیرکان پہاڑیوں میں دہشت گردوں کی موجودگی کی خفیہ اطلاعات پر آپریشن کیا، آپریشن ملک دشمن عناصر کے حمائیت یافتہ دہشت گردوں کے خلاف کیا گیا۔

ترجمان پاک فوج کے مطابق آپریشن کے دوران فورسز کیساتھ فائرنگ کے شدید تبادلے میں 6 دہشت گرد مارے گئے تھے، مارے جانیوالے دہشت گرد کیچ میں ہونے والی حالیہ تخریب کاری میں ملوث تھے۔ آپریشن کے دوران دہشت گردوں کے ٹھکانے سے بڑی تعداد میں اسلحہ اور گولیاں بھی برآمد کرلی گئیں۔