تازہ ترین
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کورونا سے مزید3اموات،این آئی ایچ
  • بریکنگ :- 24گھنٹےکےدوران 20ہزار272ٹیسٹ کیے گئے،728کیسز رپورٹ
  • بریکنگ :- 161مریضوں کی حالت تشویشناک،مثبت کیسز کی شرح 3.59فیصد ریکارڈ

حکومت کا وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کے غیر آئینی اقدام پر قانونی کارروائی کا فیصلہ

Published On 26 May,2022 10:36 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) وفاقی حکومت نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان کے غیر آئینی اقدام پر قانونی کارروائی کا فیصلہ کر لیا۔

وفاقی وزیر داخلہ رانا ثناءاللہ نے ایک بیان میں کہا کہ وزیر اعلی خیبر پختونخوا محمود خان نے وفاق پر چڑھائی کرکے اپنے عہدے کا غیر آئینی استعمال کیا۔ پی ٹی آئی کے فتنہ مارچ میں مسلح پولیس افسران کے ہمراہ وزیر اعلی کے پی کی شرکت وفاق پرحملہ ہے۔ وفاقی حکومت نے وزیر اعلی کے غیر آئینی اقدام پر قانونی کارروائی کا فیصلہ کیاہے۔

رانا ثناءاللہ نے کہا کہ وزیر اعلی خیبر پختونخوا کیخلاف آئینی کارروائی کیلئے وزارت قانون سے رائے طلب کر لی گئی ہے۔ وزارت قانون سے حاصل قانونی رائے پر عمل کریں گے۔ خیبر پختونخوا میں تعینات وفاقی سرکاری ملازمین نے پی ٹی آئی کے فتنہ مارچ میں سہولت کاری فراہم کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا میں تعینات وفاقی پولیس افسران اور انتظامیہ کے اعلی عہدیداروں کیخلاف بھی ایسٹا کوڈ کے تحت کاروائی کا فیصلہ کیا ہے۔ بعض پولیس افسران مسلح ہو کر پی ٹی آئی کے فتنہ مارچ میں وفاق پر چڑھائی میں ملوث پائے گئے ہیں۔ ایسے افسران کیخلاف اپنے عہدوں کا برخلاف قانون استعمال کرنے پرکاروائی کا فیصلہ کیا ہے۔ خیبر پختونخوا میں وفاق کے تعینات پولیس اور انتطامیہ کے بعض افسران سیاسی جماعت کے آلہ کار بنے۔