تازہ ترین
  • بریکنگ :- کوروناکہ وجہ سےعالمی سطح پرمہنگائی ہوئی،وزیرمملکت فرخ حبیب
  • بریکنگ :- معاشی چیلنجزکےباوجودشرح نمو 5.37 فیصدہوناکامیابی ہے،فرخ حبیب
  • بریکنگ :- پہلی ششماہی میں آئی ٹی برآمدات میں 35.8فیصداضافہ ہوا،فرخ حبیب
  • بریکنگ :- ٹیکس وصولی 32.4،اسٹیٹ بینک ذخائرمیں 31.8فیصداضافہ ہوا،فرخ حبیب
  • بریکنگ :- ٹیکسٹائل برآمدات 26،ترسیلات زرمیں 13.3فیصداضافہ ہوا،فرخ حبیب
  • بریکنگ :- چاول،گنا،گندم،کپاس اورمکئی کی فصلوں کی پیداوارمیں اضافہ ہوا،فرخ حبیب
  • بریکنگ :- زیادہ پیداوارسےکسانوں کواربوں روپےکی اضافی آمدن ہوئی،فرخ حبیب
  • بریکنگ :- کسان کی قوت خریدمیں بھی اضافہ ہوا،وزیرمملکت فرخ حبیب

چین میں 'لنکڈ اِن' کی سروس کو بند کرنے کا فیصلہ

Published On 15 October,2021 11:19 pm

لاہور:(ویب ڈیسک)چین میں پروفیشنل نیٹ ورکنگ سائٹ 'لنکڈ اِن' کی سروس کو بند کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق انفارمیشن ٹیکنالوجی کی بڑی امریکی کمپنی مائیکرو سافٹ نےگزشتہ روز اعلان کیا کہ بیجنگ کے سخت قوانین کی وجہ سے وہ اپنی کاروباری نیٹ ورکنگ کی معروف ویب سائٹ  لنکڈ اِن  کو اس برس کے اواخر تک چینی مارکیٹ سے نکال لے گی۔

کمپنی کی جانب سے اپنی ایک بلاگ پوسٹ میں لکھا گیا کہ چونکہ چین میں آپریٹنگ ماحول بہت زیادہ مشکل ہو گیا ہے اور احکامات کی تعمیل کی بھی بہت زیادہ ضروریات ہیں ، اسی وجہ سے ملک میں ویب سائٹ کے آپریشن کو بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ ایک مرتبہ لنکڈ ان نے ممنوعہ مواد شیئر کرنے پر چین کے اندر بعض امریکی صحافیوں کے پروفائلز کو بلاک کر دیا تھا، جس کے لیے اسے شدید نکتہ چینی کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ اس ویب سائٹ پر موجود دانشوروں، سرکاری ملازمین اور بعض دیگر اہم شخصیات کے پروفائلز کو بھی اسی وجہ سے بلاک کیا جا چکا ہے جبکہ انسانی حقوق کی تنظیمیں اس طرح کی سنسر شپ کے لیے کمپنی پر شدید نکتہ چینی کرتی رہی ہیں۔

لنکڈ اِن پر پابندی کے بعد چین میں اس کی جگہ اِن جابز نامی ویب سائٹ کو لانچ کیا جائے گا جو لنکڈ اِن کی بعض نیٹ ورکنگ فیچر کا بھی استعمال کرتی ہے، تاہم اس ویب سائٹ میں صارفین کے لیے مواد یا پھر مضامین شیئر کرنے کا کوئی فیچر موجود نہیں ہے اس لیے وہ کوئی پوسٹ شیئر نہیں کر سکتے۔

خیال رہے کہ چین میں سوشل میڈیا سائٹس سخت قوانین کے تابع ہیں اور حکومت کی جانب سے طلب کیے جانے پر چینی صارفین کا ذاتی ڈیٹا حکام کے حوالے کرنا لازمی ہے۔ ایسے پلیٹ فارمز کے لیے حکمران چینی کمیونسٹ پارٹی پر تنقیدی یا اس طرح کے دیگر حساس مواد کو حذف کرنا بھی لازمی ہے۔