تازہ ترین
  • بریکنگ :- کوئٹہ اورلسبیلہ کےعلاوہ بلوچستان کے 32اضلاع میں بلدیاتی الیکشن آج ہوں گے
  • بریکنگ :- بلدیاتی انتخابات کےلیےبیلٹ پیپرزاورانتخابی میٹریل کی ترسیل کاعمل مکمل
  • بریکنگ :- پولنگ صبح 8بجےسےشام 5بجےتک بغیرکسی وقفےکےجاری رہےگی
  • بریکنگ :- کوئٹہ:7 میونسپل کارپوریشن،838یونین کونسلزمیں پولنگ ہوگی
  • بریکنگ :- کوئٹہ:5ہزار345دیہی وارڈاور9ہزار14شہری وارڈکےلیےپولنگ ہوگی
  • بریکنگ :- کوئٹہ:35لاکھ52ہزار298ووٹرز اپنا حق رائے دہی استعمال کریں گے
  • بریکنگ :- کوئٹہ:20لاکھ 6ہزار274مرداور15لاکھ46ہزار124خواتین ووٹرزہیں
  • بریکنگ :- کوئٹہ:32اضلاع میں 5ہزار226پولنگ اسٹیشنزقائم
  • بریکنگ :- کوئٹہ:2ہزار54پولنگ اسٹیشنزانتہائی حساس،ایک ہزار974حساس قرار
  • بریکنگ :- الیکشن میں16 ہزار195امیدوارمدمقابل،102 امیدواربلامقابلہ منتخب
  • بریکنگ :- کوئٹہ:پولنگ اسٹیشنزپرپولیس،لیویزاورایف سی کےجوان تعینات ہوں گے

پشاور: سرکاری نرخناموں پرعملدرآمد میں سٹاف کی کمی حائل،شہریوں کا ٹھوس منصوبہ بندی کا مطالبہ

Published On 27 September,2021 08:55 am

پشاور: (دنیا نیوز) پشاورمیں سرکاری نرخنامے پرعملدرآمد اور اشیائے خورونوش کی چیکنگ میں مسائل آڑے آ گئے، متعلقہ محکموں کو اسٹاف کی کمی کے باعث سرکاری احکامات پرمکمل عملدرآمد نہ ہو سکا، شہریوں نے ٹھوس منصوبہ بندی کا مطالبہ کر دیا۔

پشاور میں اشیائے خورونوش کی چیکنگ سمیت گراں فروشوں کے خلاف کارروائیاں برائے نام رہ گئیں، متعلقہ محکموں کو روک تھام میں مسائل کا سامنا ہے۔

شہر کے مختلف علاقوں میں اشیائے خورونوش کے الگ الگ نرخ خود ساختہ طور پر مقررکیے گئے ہیں، دکانداروں نے سرکاری نرخنامے کو یکسر نظر انداز کردیا ہے، شہریوں کا کہنا ہے کہ حکومت سرکاری نرخنامے پر عملدرآمد یقینی بنانے کےلیے اقدامات اٹھائے۔

دوسری جانب صوبائی وزیرخوراک کا کہنا ہے کہ اسٹاف کی کمی کے باعث کارروائیوں میں مشکلات کا سامنا ہے، شہر میں زیادہ سے زیادہ علاقوں کو کور کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

شہر کے چار ٹاونز میں روٹی ،دودھ اور دہی سمیت دیگر ضروری اشیاء کے نرخ الگ وصول کیے جارہے ہیں۔