تازہ ترین
  • بریکنگ :- وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت اجلاس
  • بریکنگ :- وفاقی حکومت کافوجداری مقدمات کاقانون بدلنےکافیصلہ
  • بریکنگ :- فوجداری مقدمات میں ترمیم سمیت نئےقوانین لانےکی منظوری
  • بریکنگ :- آئینی ترامیم آئندہ ہفتےکابینہ میں پیش کی جائیں گی
  • بریکنگ :- ایف آئی آردرج نہ کرنے پر ایس پی کودرخواست دی جاسکے گی، فروغ نسیم
  • بریکنگ :- اسلام آباد: 9 ماہ میں مقدمات کافیصلہ لازمی ہوگا، فروغ نسیم
  • بریکنگ :- مقدمات کافیصلہ نہ ہونےپرمتعلقہ ججزہائیکورٹ کوجوابدہ ہوں گے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- 9ماہ میں ٹرائل مکمل کرنےپرججزکیخلاف ہائیکورٹ انضباطی کارروائی کرسکےگی، فروغ نسیم
  • بریکنگ :- تھانوں کواسٹیشنری،ٹرانسپورٹ سمیت ضروری اخراجات کے فنڈزملیں گے، فروغ نسیم
  • بریکنگ :- عام جرائم کےکیسزمیں 5 سال تک کی سزاکیلئےپلی بارگین کی جاسکےگی، فروغ نسیم

مینار پاکستان پر جلسہ: لیگی رہنماؤں کیخلاف مقدمہ درج، مریم نواز اور دیگر رہنما نامزد

Published On 15 December,2020 09:31 am

لاہور: (دنیا نیوز) پی ڈی ایم کے مینار پاکستان میں جلسے پر ایس او پیز کی خلاف ورزی اور املاک کو نقصان پہنچانے پر لیگی رہنماؤں کیخلاف مقدمہ درج کرلیا گیا۔ مقدمہ سکیورٹی آفیسر پی ایچ اے کی مدعیت میں تھانہ لاری اڈہ میں درج کیا گیا۔

مقدمے میں نائب صدر مسلم لیگ ن مریم نواز، درجنوں رہنماؤں کو نامزد کیا گیا۔ ایف آئی آر کے متن میں کہا گیا کہ پی ڈی ایم انتظامیہ پارک کا گیٹ، جنگلے توڑ کر پارک میں داخل ہوئی، ملک وسیم کھوکھر 125 افراد کے ہمراہ مزاحمت کر کے پارک میں داخل ہوئے، فلیکسز، سرچ لائٹس لگانے کیلئے فرش اور ٹریک کی ٹائلیں توڑی گئیں، قومی ورثے کی حرمت کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا گیا۔

لیگی رہنما رانا تنویر، خواجہ آصف، احسن اقبال، طلال چودھری، ایاز صادق، خواجہ سعد رفیق، رانا ثناء اللہ، پرویز ملک، رانا مبشر کیخلاف مقدمہ درج کیا گیا۔ شاہد خاقان عباسی، شیخ روحیل اصغر، سمیع اللہ، ملک افضل کھوکھر، سیف الملوک کھوکھر، بلال یاسین، خواجہ سلمان رفیق، خواجہ عمران نذیر کیخلاف بھی ایف آئی آر کاٹی گئی۔

غزالی سلیم بٹ، مجتبیٰ شجاع الرحمان، میاں مرغوب احمد، چودھری شہباز، رانا مشہود، چودھری اختر علی، ملک غلام حبیب اعوان، ملک وحید، شائستہ پرویز ملک، مریم اورنگزیب، عظمیٰ بخاری کیخلاف ایف آئی آر درج کی گئی۔ رانا ارشد، میاں طارق، توصیف شاہ، عطاء اللہ تارڑ، رانا ارشد، فیصل کھوکھر، مخدوم جاوید ہاشمی، کرنل (ر) مبشر سمیت 100 افراد کیخلاف ایف آئی آر کاٹی گئی۔