تازہ ترین
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کورونامریضوں کی تعداد 12 لاکھ 21 ہزار 261 ہوگئی
  • بریکنگ :- ملک میں کوروناکےایکٹوکیسزکی تعداد 64 ہزار 564 ہے،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 24 گھنٹے کےدوران کوروناسےمزید 63 اموات
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کوروناسےجاں بحق افرادکی تعداد 27 ہزار 135 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےکےدوران 57 ہزار 77 کوروناٹیسٹ کیےگئے،این سی اوسی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کورونا کے مزید 2512 کیس رپورٹ،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک میں کورونامثبت کیسزکی شرح 4.4 فیصدرہی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکے 3 ہزار 610 مریض صحت یاب،این سی اوسی
  • بریکنگ :- کوروناسےصحت یاب افرادکی مجموعی تعداد 11 لاکھ 29 ہزار 562 ہوگئی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں ایک کروڑ 87 لاکھ 97 ہزار 433 کوروناٹیسٹ کیےجاچکے
  • بریکنگ :- کوروناسےمتاثر 5117 مریضوں کی حالت تشویشناک،این سی اوسی
  • بریکنگ :- پنجاب 4 لاکھ 20 ہزار 615 ،سندھ میں 4 لاکھ 49 ہزار 349 کیسز،این سی اوسی
  • بریکنگ :- خیبرپختونخواایک لاکھ 70 ہزار 738،بلوچستان میں 32 ہزار 722 کیس رپورٹ
  • بریکنگ :- اسلام آباد ایک لاکھ 3 ہزار 923 ،گلگت بلتستان میں 10 ہزار 232 کیسز
  • بریکنگ :- آزادکشمیرمیں کورونامریضوں کی تعداد 33 ہزار 682 ہوگئی،این سی اوسی

نیب مریم نواز کی زبان بندی کرانے کا خواہش مند ہے: شاہد خاقان عباسی

Published On 13 March,2021 05:03 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) پاکستان مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ نیب ن لیگ کی نائب صدر مریم نواز کی زبان بندی کا خواہش مند ہے، ن لیگی رہنما کو جس کیس میں ضمانت ملی اس کا پٹیشن میں ذکر ہی نہیں۔

پاکستان مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگزیب کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ نیب نے مریم نوازکو ڈرانے کی کوشش کی۔ مریم نوازپرنیب کومفلوج کرنے کا الزام لگایا گیا۔ جب مریم نوازپیشی پرآرہی تھی توان کی بلٹ پروف گاڑی کوتوڑا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ پولیس والوں نے کی گاڑی پرحملہ کیا تھا۔ نیب کی پیٹشن، زبان بندی، ڈرانے، دھکمانے کی کوشش ہے۔ کہا گیا مریم نوازنے نیب کوڈرانے کی کوشش کی۔ مریم پرنیب کومفلوج کرنے کا الزام لگایا گیا۔ جب وہ پیشی پرآرہی تھی توان کی بلٹ پروف گاڑی کوتوڑا گیا۔

شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ پولیس والوں نے مریم نوازکی گاڑی پرحملہ کیا تھا۔ نیب کی پیٹشن،زبان بندی،ڈرانے،دھکمانے کی کوشش ہے۔ جب دلیل، شہادت نہ ملی توپھراس قسم کی پیٹشن کی گئی، قانونی تاریخ میں ایسی کوئی نظیرنہیں۔ عدالت اس فریلوس پیٹشن پرنیب کوجرمانہ بھی کرے گی۔ اس پیٹشن کا مقصد عدالت کا وقت ضائع کرنے کی کوشش ہے۔

شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ ہمیں پوری امید ہے نیب جرمانہ دے کرگھرجائے گا، جس طرح براڈشیٹ میں جرمانہ اسی طرح نیب اس پیٹشن میں ادا کرے گا۔ نیب آج سیاست کرنے پرمجبوراورسیاست کا فرنٹ لائن کھلاڑی ہے۔ مشرف نے بھی نیب کے ذریعے سیاست کرنے کی کوشش کی تھی۔

ان کا کہنا تھا کہ نیب کا ایک ہی مقصد سیاست دانوں کو دبانا اورووٹ توڑنا ہے۔ احتساب کے اداروں کا بھی احتساب ہوگا۔ یہ ادارے احتساب سے بالاترنہیں ہوتے، پہلے دن سے کہہ رہا ہوں کہ نیب حکومت گٹھ جوڑنہیں چلے گا۔

سینیٹ الیکشن کے حوالے سے سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ووٹ پرنشان لگانے کی ہدایات سینیٹ کی ہے۔ جہاں بھی مہرلگائی جائے ووٹ صیح ہوتا ہے۔ ووٹ پرنشان لگانے کی ہدایات سینیٹ کی ہے۔