تازہ ترین
  • بریکنگ :- اسلام آبادیونائیٹڈنےملتان سلطانزکو4وکٹ سےشکست دےدی
  • بریکنگ :- ملتان سلطانز نے اسلام آباد یونائیٹڈ کو150رنز کاہدف دیاتھا
  • بریکنگ :- ابوظہبی:ملتان سلطانز نےمقررہ 20اوورز میں 149رنز بنائےتھے
  • بریکنگ :- اسلام آبادیونائیٹڈ نے 150رنز کاہدف 19.4اوورزمیں حاصل کیا
  • بریکنگ :- اسلام آباد یونائیٹڈ کے محمدوسیم نے 4کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا
  • بریکنگ :- فہیم اشرف اور فواداحمد نے 2-2کھلاڑیوں کوآؤٹ کیا
  • بریکنگ :- ابوظہبی :شاہ نوازدھانی اورعثمان قادرنے2-2وکٹیں حاصل کیں
  • بریکنگ :- ابوظہبی :شاداب خان اور افتخاراحمد نے ایک ایک وکٹ حاصل کی
  • بریکنگ :- شاداب خان 35،حسین طلعت 34اور آصف علی نے26رنز بنائے

آئی ایم ایف ڈیل میں غلطی تسلیم کرنا کافی نہیں، عمران خان قوم سے معافی مانگیں: بلاول

Published On 06 May,2021 05:48 pm

کراچی: (ویب ڈیسک) پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف ڈیل پر نظر ثانی کے بجائے پہلے ہماری بات مان لیتے تو آج معیشت یوں تباہ نہ ہوتی، پی ٹی آئی کا آئی ایم ایف ڈیل میں اپنی غلطی کو تسلیم کرنا کافی نہیں، عمران خان کو قوم سے معافی مانگنا ہوگی۔

پیپلز پارٹی میڈیا سیل کی جانب سے جاری پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ ملک میں ہونے والی مہنگائی کی وجہ عمران خان کے غلط فیصلے ہیں، وزیراعظم کسی اور کو قربانی کا بکرا بنا کر خود نہیں بچ سکتے۔

بلاول بھٹو زرداری نے وزیراعظم پر تنقید کرتے ہوئے یہ بھی کہا کہ آئی ایم ایف سے غلط ڈیل کا اعتراف اس بات کا ثبوت ہے کہ عمران خان کے پاس ایک اہل حکمران والی سمجھ بوجھ بالکل نہیں، پہلے آئی ایم ایف سے معاہدے سے گریز کا دفاع کیا، پھر تاخیر سے معاہدہ کرکے غلط ڈیل کا دفاع کیا اور اب اس سے بھی پی ٹی آئی نے یوٹرن لے لیا۔

ان کا کہنا تھا کہ عمران خان غلطیاں کرتے ہیں، غلطیوں کا اعتراف کرتے ہیں اور پھر وہی غلطیاں دہراتے ہیں۔ ہم عمران خان کے آئی ایم ایف کی ہدایت پر عوام سے 1200 ارب روپے کے مزید ٹیکس وصول کرنے کے ہتھکنڈے کو ناکام بنائیں گے۔

پی پی پی چیئرمین کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف کے کہنے پر بجلی، گیس اور پیٹرول مہنگا کرنے کے بعد عمران خان کہتے ہیں کہ وہ اپنے فیصلوں میں آزاد ہیں۔ ہم آئی ایم ایف کے تنخواہ دار ملازموں کو پاکستان کے عوام کے فیصلے نہیں کرنے دیں گے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ آئی ایم ایف کے کہنے پر عوام پر ٹیکسوں کا بوجھ لادنا دراصل ملکی وقار پر سمجھوتہ ہے، آئی ایم ایف کی ہدایت پر عمران خان نے روپے کی قدر گرا کر بدترین فیصلہ کیا جس کا خمیازہ عوام بھگت رہے ہیں۔