تازہ ترین
  • بریکنگ :- لانگ مارچ کےدوران توڑپھوڑ،سرکاری املاک کونقصان پہنچانےکاکیس
  • بریکنگ :- پی ٹی آئی رہنماجمشیدچیمہ،حماداظہر،یاسمین راشد،شفقت محمودعدالت پیش
  • بریکنگ :- لاہور:اعجازچودھری،محمودالرشید،اسلم اقبال اوردیگربھی عدالت پیش
  • بریکنگ :- لاہور:ملزمان کیخلاف تھانہ شاہدرہ اورگلبرگ میں مقدمات درج ہیں

43 مشکوک ٹرانزیکشنز کے ذریعے کروڑوں روپے منتقل ہوئے: عطا تارڑ

Published On 05 May,2022 07:09 pm

لاہور:(دنیا نیوز) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما عطا تارڑ نے عمران خان سے ذرائع آمدن بتانے کا مطالبہ کرتے ہوئے الزام عائد کیا ہے کہ نیازی حکومت کے ساڑھے تین سال کے دوران پنجاب کو دونوں ہاتھوں سے لوٹا گیا، 43 مشکوک ٹرانزیکشنز کے ذریعے کروڑوں روپے منتقل ہوئے، کہانیاں کھل کر سامنے آرہی ہیں۔

لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے عطا تارڑ کا کہنا تھا کہ وسیم اکرم پلس کے پاس کوئی تجربہ نہیں تھا، عمران کی ناک تلے کئی 100 کروڑ کی کرپشن کی، ہمارے پاس کچھ شواہد آنا شروع ہوئے ہیں، 43 مشکوک بینک ٹرانزیکشن ہے، ایک اکاؤنٹ میں 45 کروڑ آیا، 70 کروڑ کیش کی شکل میں آیا، یہ کیش ڈیپازٹ کس مد میں آئے؟ یہ کسی بھی سڑک کی منظوری کرانے سے پہلے اربوں کی اراضی خرید لیتے تھے، پہلی کرپشن ٹیکس ایمنسٹی، دوسری کرپشن ٹھیکے داروں سے ٹرانسفر، پوسٹنگ تھی، کیا عمران خان کو 85 کروڑ روپے، 43 بینک ٹرانزیکشنز کا علم نہیں تھا؟، ہمیں یقین ہے یہ کیش عمران خان کو گیا۔

انہوں نے سوال کیا کہ عمران خان کا ذریعہ معاش کیا ہے؟ اگرعمران اتنے سچے ہیں تو اپنا ذریعہ آمدن بتائیں، سابق وزیراعظم کی شاہانہ زندگی، 400 کنال کے گھر کو کیسے چلاتے ہیں، اب سمجھ آئی ہے ان کا گھر کیسے چلتا تھا، 50 کروڑ پے آرڈر کے ذریعے اکاؤنٹس سے نکلوایا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ عمران خان نے جان بوجھ کرعثمان بزدار کو لگایا، اکاؤنٹس کی تمام تر تفصیلات موجود ہے، یواے ای میں فلیٹ خریدا گیا، اگر یہ بے نامی پراپرٹی نہ ہوتی توعمران ایمنسٹی اسکیم نہ کراتے، یہ کوئی بین الاقوامی سازش نہیں ہے، ساڑھے تین سال میں عوام کے حق پر ڈاکہ ڈالا گیا، عمران خان نے ایسے شخص کو سی ایم بنایا اس کے پاس کوئی اختیارات نہیں تھے، زمان پارک کا گھر عمران خان کو کس نے بنا کر دیا اور کیوں بنا کر دیا۔

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما نے کہا کہ تانے، بانے بنی گالہ سے ملتے ہیں، عمران خان پبلک آفس ہولڈر آپ ہیں، عمران خان نے یہ کرپشن خود کروائی ہے، پوسٹنگ، ٹرانسفر کے لیے رشوت پر توعمران کو نوٹس لینا چاہیے تھا، پنجاب میں ہر نوکری، منصوبوں پر کمیشن لی گئی، عمران خان کے پاس ان سوالات کا کوئی جواب نہیں، فواد چودھری کی معصومیت پر صدقے جائیں، ان کو بھی کالے کرتوتوں کا جواب دینا ہوگا، فواد چودھری کو چیلنج کرتا ہوں اپنے چیئرمین کے الزامات کا جواب دے، کیش کہاں گیا اور کہاں سے آیا، جواب دیں، توقع رکھتا ہوں ان سوالوں کا جواب دیا جائے گا، اربوں کی اراضی، مشکوک ٹرانزیکشن کا ریکارڈ پبلک کریں گے، 85 کروڑ کیش کی صورت میں بینکوں میں آیا، ابھی تو یہ شروعات ہیں۔

عطا تارڑ کا کہنا تھا کہ شہباز گل کے ساتھ ہمدردی ہے، اگر وہ چاہیں گے تو انہیں سکیورٹی بھی دیں گے، مریم نوازکراؤڈ پلر ہیں، جہاں جائیں گی عوام کا سمندر ہوگا۔

 فرح خان کے شوہر احسن جمیل گجر نے عطا تارڑ کے الزامات کو مسترد کردیا

 فرح خان کے شوہر احسن جمیل گجر نے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ عطا تارڑ کے پاس کوئی کام نہیں، فضولیات میں لگے ہوئے ہیں، ان کو عمران خان کے خلاف کچھ نہیں ملتا تو میری اہلیہ پر الزام تراشی شروع کر دیتے ہیں، ہم نے پی ٹی آئی دور میں کوئی ایمنسٹی نہیں لی، بیرون ملک آنا جانا ہمارا معمول ہے، جلد پاکستان لوٹ آئیں گے۔

دنیا نیوزکے پروگرام’’نقطہ نظر‘‘میں خصوصی گفتگو کرتے ہوئے احسن جمیل گجر کا کہنا تھا کہ فرح کے نام کے ساتھ گوگی لگا کر ڈرامہ رچا رہے ہیں، ہمیں کسی عدالت یا ادارے سے کوئی نوٹس موصول نہیں ہوا، اسی ماہ کے اندر پاکستان آؤں گا، فرح بھی ایک، دو ماہ تک واپس آجائیں گی، اگر پہلے بھی ضرورت پڑی تو واپس آجائیں گے، تمام چینلز پراعلان کیا ہے جب بھی کوئی ادارہ بلائے گا حاضر ہوجائیں گے، ہم کوئی بھگوڑے نہیں، ہمیں ابھی تک نیب سے بھی کوئی نوٹس موصول نہیں ہوا، بیرون ملک آنا، جانا ہماری روٹین کا عمل ہے، جب سے حکومت بنی انہوں نے فرح پر الزامات لگانا شروع کر دیئے ہیں، کس قانون کے تحت فرح کو لاؤگے پہلے کوئی مقدمہ تو بنالو، وزرا صبح و شام فرح کا ترانہ گانا شروع کر دیتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ کوئی کرپشن کا پیسہ نہیں کاروبارسے کمایا ہوا پیسہ ہے، ہم نے عمران خان کی حکومت میں کوئی ایمنسٹی نہیں لیں، ان کوعمران خان کے خلاف کچھ نہیں ملتا تو فرح پر الزام لگانا شروع کر دیتے ہیں، عطا تارڑ کے پاس کوئی کام نہیں فضولیات کے پیچھے لگے ہوئے ہیں، سابق چیئرمین ضلع کونسل رہا ہوں، جب چیئرمین کونسل تھا اس وقت فرح سے شادی بھی نہیں ہوئی تھی، ہمارا کاروبار ایف بی آر میں ڈیکلیئرڈ ہیں، ہم زمینوں کے لین دین کا کاروبار کرتے ہیں۔

فرح خان کے شوہر کا کہنا تھا کہ خاندانی تقسیم کے دوران کچھ زمینیں حصے میں آئی تھیں، ہمارا آبائی گاؤں گوجرانوالہ سٹی کے اندر ہے، خاندان کی کچھ ہم نے چیزیں بیچی تھیں، ہمارا سارا 99 فیصد کاروبارعمران خان کی حکومت سے پہلے کا ہے، تین سال بیمار رہا، ٹیکس ریٹرن فائل نہیں کرسکا تھا، 2019 اور 2020 اور 2021 میں بھی ٹیکس ریٹرن فائل کیے، ہم نے ایمنسٹی عمران خان کے دور حکومت سے پہلے لیں۔

احسن جمیل گجر نے کہا کہ ہم اس ملک کے شہری ہیں، ہمارے خلاف پروپیگنڈا کیا جا رہا ہے، ہمارا عمران خان اور ان کی اہلیہ سے کسی قسم کا کوئی کاروبار نہیں، شوکت خانم ہسپتال کو ایک دفعہ ایک لاکھ روپیہ ڈونیشن دی،میرے پرائیویٹ کاروبار میں کس قانون کے تحت مداخلت کر رہے ہیں، آج تک ہمارے خلاف کچھ ثابت نہیں ہوا، کس قانون کے تحت وزرا دھمکیاں دے رہے ہیں۔

دنیا نیوز کے پروگرام میں گفتگو کے دوران انہوں نے کہا کہ عطا تارڑ ان لوگوں کی اولاد ہے جو ججوں کو رشوت دیتے رہے، چولی چک جیسا بندہ مجھے چور کہہ رہا ہے، عطا تارڑ بتائے اس کا کیا کاروبار ہے، وہ سارا دن حمزہ شہباز کے پیچھے گھومتا رہتا ہے، ساری (ن) لیگ فرح کا ترانہ گا رہی ہے، دبئی کا فلیٹ 15 سے 16سال پہلے خریدا، فلیٹ ایف بی آر میں ڈیکلیئرڈ ہیں، یہ سارا پروپیگنڈا کر رہے ہیں، میری اہلیہ کا نام گوگی نہیں ہے، میری اہلیہ کا نام فرح خان ہے، ان کو میری اہلیہ کا نام گوگی لیتے ہوئے شرم کرنی چاہیے، ایک لڑکی کے پیچھے پڑگئے، ان کو مہنگائی کی کوئی فکر نہیں، جہاں بھی پراپرٹی ہے اس کو ڈیکلیئرڈ کیا ہوا ہے، اگر کوئی ہماری ان ڈیکلیئرڈ پراپرٹی بتادے تو ہر سزا بھگتنے کو تیار ہوں۔