ماں کا بیٹے کی قبر کو سجانے کیلئے قانون سے لڑنے کا فیصلہ

Published On 13 November,2023 11:05 am

گلوسیسٹر: (ویب ڈیسک) دنیا میں جتنے بھی رشتے ہوتے ہیں اور ان میں جتنی بھی محبت ہو وہ اپنی محبت کی قیمت مانگتے ہیں، مگر ماں کا رشتہ دنیا میں واحد ایک ایسا رشتہ ہے جو صرف آپ کو دیتا ہی دیتا ہے اور اس کے بدلے آپ سے کچھ نہیں مانگتا۔

ماں کا رشتہ ایک ایسا انمول رشتہ ہے جو اپنے بچوں کیلئے ہر طرح کی مشکلات سے بھی لڑ جاتا ہے، ایسا ہی کچھ ہوا انگلینڈ میں جہاں ایک ماں نے اپنے 7 سالہ بیٹے کی قبر کو سجانے کیلئے قانون سے لڑنے کا فیصلہ کر لیا۔

انگلینڈ میں ایک ماں کو سرکاری ہدایت موصول ہوئیں جس میں کہا گیا کہ وہ اپنے 7 سالہ بیٹے کی قبر کے اردگرد کی سجاوٹ کو ہٹا دیں کیونکہ یہ انتظام قواعد و ضوابط کیخلاف ہیں تاہم ماں نے اس پر عمل کرنے سے انکار کر دیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق 29 سالہ شارنا اینڈریوز کا چھوٹا بیٹا ینگ ہیری-لی اینڈریوز فروری 2022 میں دمہ کے شدید دورے کے بعد انتقال کر گیا تھا، جس کے بعد شارنا نے اپنی جوان بیٹی کے ساتھ مل کر لکڑی سے بنی قطبے کی ایک باڑ کو ہاتھ سے پینٹ کرنے میں کئی دن گزارے جسے انہوں نے بیٹے کی قبر کے پاس لگا دیا۔

تاہم گزشتہ ماہ شارنا کو گلوسیسٹر سٹی کونسل کی طرف سے ایک خط موصول ہوا جس میں رنگین باڑ اور قبر کی سجاوٹ کو ہٹانے کا مطالبہ کیا گیا کیونکہ اس سے قواعد و ضوابط کی خلاف ورزی ہوتی ہے۔

والدہ کا کہنا تھا کہ انہوں نے اپنے بیٹے کیلئے سٹی کونسل کے اس قانون سے لڑنے کا فیصلہ کیا ہے کیونکہ قبر کی سجاوٹ میرے 7 سالہ بیٹے کی پُرمزاح اور خوش مزاج شخصیت کی نمائندہ ہے، وہ ان 12 خاندانوں میں سے ایک ہیں جن سے اپنے عزیزوں کی قبروں سے سجاوٹ ہٹانے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

Advertisement