تازہ ترین
  • بریکنگ :- جنوبی پنجاب صوبہ کاقیام تحریک انصاف کےمنشورکاحصہ ہے،وزیر خارجہ
  • بریکنگ :- ملتان:صوبہ بنانےکیلئےہمارے پاس دوتہائی اکثریت نہیں،وزیر خارجہ
  • بریکنگ :- پیپلزپارٹی، ن لیگ دونوں جماعتوں کی قیادت کو خط لکھے،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- ابھی تک دونوں جماعتوں کی جانب سےجواب سامنےنہیں آیا،وزیر خارجہ
  • بریکنگ :- پیپلزپارٹی،ن لیگ جنوبی پنجاب صوبہ کیلئےبہت کچھ کرسکتےتھے،وزیر خارجہ
  • بریکنگ :- پیپلزپارٹی،ن لیگ صوبہ تودور،سیکرٹریٹ بھی نہ بناسکے،شاہ محمود قریشی
  • بریکنگ :- ہم نےسیکرٹریٹ بناکرجنوبی پنجاب صوبےکی بنیادرکھ دی،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- ملتان:اپوزیشن سےملکی ترقی ہضم نہیں ہورہی،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- تحریک انصاف کی حکومت آئینی مدت پوری کرےگی،وزیر خارجہ
  • بریکنگ :- ملتان: عام انتخابات اپنے وقت پر ہی ہوں گے،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- حکومتی پالیسیوں کوعالمی سطح پرسراہا جا رہا ہے،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- مہنگائی ہماری حکومت کیلئے بہت بڑا چیلنج ہے،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- مہنگائی کیخلاف جنگ لڑرہےہیں،جلد قابوپالیں گے،وزیر خارجہ
  • بریکنگ :- عمران خان کرپشن کےخاتمےپریقین رکھتے ہیں، شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- پنجاب میں نئےبلدیاتی نظام سےعوام کوریلیف ملےگا،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- سندھ میں بلدیاتی نظام پراپوزیشن جماعتوں کواعتراض ہے،وزیرخارجہ

جرمن انتخابات میں اینگلا مرکل کی پارٹی کو شکست، سوشل ڈیموکریٹ پارٹی کو برتری مل گئی

Published On 27 September,2021 09:19 am

برلن: (دنیا نیوز) جرمنی کے عام انتخابات میں چانسلر اینگلا مرکل کی پارٹی کو شکست کا سامنا، سوشل ڈیموکریٹ پارٹی نے 206 نشستیں حاصل کر لیں۔ حکومتی اتحاد کے پاس 196 سیٹیں ہیں، گرین پارٹی 118 نشستوں کے ساتھ تیسری پوزیشن پر ہے۔

جرمنی میں عام انتخابات،اینگلا مرکل کی پارٹی نے اکثریت کھو دی، کرسچن ڈیموکریٹک یونین اور سوشل کرسچن یونین کے اتحاد کے باوجود دوسرے نمبر پر، سوشل ڈیموکریٹ پارٹی سبقت لے گئی۔

الیکشن کے ابتدائی نتائج کے مطابق سب سے زیادہ کامیاب سوشل ڈیموکریٹ پارٹی نے ماضی کے مقابلے میں 8 فیصد زائد ووٹ حاصل کیے۔ اینگلا مرکل کی پارٹی کے ووٹوں میں کمی کا تناسب بھی آٹھ فی صد ہی رہا اور تاریخ کا بدترین نتیجہ سامنے آیا۔ گرین پارٹی بھی سو سے زائد سیٹوں کےساتھ تیسری بڑی جماعت کے طور پر ابھری ہے۔

بدترین کارکردگی کےباوجود اینگلا مرکل کے کرسچن ڈیموکریٹک الائنس نے امید کا دامن نہیں چھوڑا، چانسلر کے امیدوار آرمین لاشیٹ نے کہا ہے کہ ان کا سیاسی اتحاد حکومت سازی کے لیے ہر ممکن کوشش کرے گا جب کہ سوشل ڈیموکریٹ رہنما اولاف شولس کے مطابق جرمن عوام نے تبدیلی کے حق میں ووٹ دے دیا ہے، وہ حکومت سازی کےلیے پرعزم ہیں۔