تازہ ترین
  • بریکنگ :- سکردو:وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالدخورشیدکی پریس بریفنگ
  • بریکنگ :- آرٹیکل ون میں شامل ہوئےبغیرگلگت بلتستان بااختیارصوبہ بنےگا،خالدخورشید
  • بریکنگ :- جی بی کیلئےقومی اسمبلی میں چار،سینیٹ میں 8نشستیں مختص ہوں گی،وزیراعلیٰ
  • بریکنگ :- جی بی سےمنتخب قومی اسمبلی ممبروزیراعظم پاکستان بھی بن سکتاہے،خالدخورشید
  • بریکنگ :- عبوری آئینی صوبےکیلئےوفاق کی اپوزیشن جماعتوں سےتعاون کی امیدہے،وزیراعلیٰ
  • بریکنگ :- گلگت بلتستان میں لینڈریفارمزکمیشن بنایاگیاہے،وزیراعلیٰ گلگت بلتستان
  • بریکنگ :- لینڈمافیااورمحکمہ مال کےکرپٹ اہلکاروں کونشان عبرت بنائیں گے،خالدخورشید
  • بریکنگ :- 5 سال میں نیاگلگت بلتستان دےکرجائیں گے،وزیراعلیٰ گلگت بلتستان
  • بریکنگ :- 150 میگاواٹ بجلی کےمنصوبوں پرکام شروع کردیا،وزیراعلیٰ گلگت بلتستان
  • بریکنگ :- ہرضلع کےاسپتالوں میں آئی سی یوبنائیں گے،وزیراعلیٰ خالدخورشید
  • بریکنگ :- سکردو:2میڈیکل کالجزبھی قائم کیےجائیں گے،وزیراعلیٰ گلگت بلتستان

پاکستان، عالمی بینک نے 1.336 ارب ڈالر کے 7 پراجیکٹ معاہدوں پر دستخط کر دئیے

Published On 26 March,2021 06:57 pm

اسلام آباد: (ویب ڈیسک) پاکستان اورعالمی بینک نے 1.336 ارب ڈالرمالیت کے سات پراجیکٹ معاہدوں پردستخط کردئیے جس میں عالمی بینک کی جانب سے 12 کروڑ80 لاکھ ڈالرکی گرانٹ امدادبھی شامل ہے۔

تفصیلات کے مطابق ان معاہدوں پردستخظ کرنے کی تقریب وزارت اقتصادی امورمیں ہوئی، وفاقی وزیر اقتصادی امورمخدوم خسروبختیار اورپاکستان میں عالمی بینک کے کنٹری ڈائریکٹرناجی بن حسائن بھی اس موقع پرموجودتھے۔

عالمی بینک کی معاونت پاکستان میں حکومت کی جانب سے سماجی تحفظ،قدرتی آفات اورماحولیاتی خطرات کے انتظام وانصرام، بنیادی ڈھانچہ کی بہتری، زراعت وغذائی تحفظ، انسانی سرمایہ کی ترقی اوراسلوب حکمرانی میں بہتری کے شعبوں میں شروع کردہ اقدامات کیلئے استعمال ہوگی۔

وفاقی وزیرمخدوم خسروبختیارنے اس موقع پرگفتگوکرتے ہوئے پائیدارترقی کے اہداف کے حصول میں پاکستان کی حکومت کے ساتھ مسلسل تعاون پرپاکستان میں عالمی بینک کی کنٹری انتظامیہ کاشکریہ اداکیا۔ عالمی بینک کی حمایت سے پاکستان کی حکومت کی جانب سے شروع کردہ اصلاحات کے پروگرام اوراقدامات پربین الاقوامی مالیاتی اداروں اورترقیاتی شراکت داروں کے اعتمادکامظہرہے۔

انہوں نے کہاکہ پاکستان کی حکومت صوبوں کی ترقیاتی ضروریات کیلئے مالی معاونت کی فراہمی میں پرعزم ہے جن منصوبوں پر اتفاق رائے ہوا ہے ان میں کرائسس ریزلیئنٹ سوشل پروٹیکشن پروگرام (کرسپ) شامل ہے۔ معاہدے کے تحت اس پروگرام کیلئے 60 کروڑ ڈالرکی معاونت فراہم کی جائیگی، پروگرام کے تحت احساس پروگرام کے دائرہ کارمیں وسعت لائی جائیگی، پروگرام کے تحت بے نظیرانکم سپورٹ پروگرام، احساس کنڈیشنل کیش ٹرانسفر، کفالت، وسیلہ تعلیم اورنشوونما پروگرام پرتوجہ مرکوزرکھی جائیگی۔

ان کاکہنا تھا کہ اسی طرح ٹڈی دل اورغذائی تحفظ کے پروگرام کے تحت 20 کروڑڈالرکی معاونت فراہم کی جائیگی، خیبرپختونخواہیومن کیپٹل انسویسٹمنٹ پراجیکٹ کے تحت عالمی بینک پاکستان کو20 کروڑڈالرکی معاونت فراہم کرے گا، اس پراجیکٹ کے تحت خیبرپختونخوا کے چاراضلاع پشاور، ہری پور، نوشہرہ اورصوابی میں صحت عامہ کی بنیادی خدمات اورایلیمینٹری تعلیم کو فروغ دیا جائیگا۔

وفاقی وزیر کے مطابق سندھ ریزلیئنس پراجیکٹ کیلئے عالمی بینک 20 کروڑ ڈالرکی معاونت فراہم کرے گا، اس پراجیکٹ کے تحت سندھ کے منتخب اضلاع میں قدرتی آفات سے نمٹنے اورپبلک ایمرجنسی کے شعبوں میں بہتری لائی جائیگی، اس منصوبہ کے تحت صوبہ میں 35 چھوٹے بارانی ڈیموں کی تعمیربھی شامل ہے۔بلوچستان لائیولی ہوڈ اینڈانٹرپرینیورشپ اینڈ بلوچستان ہیومن کیپٹل انویسٹمنٹ پراجیکٹ کے تحت عالمی بینک پاکستان کو8 کروڑ 60 لاکھ ڈالرکی معاونت فراہم کرے گا،

پروگرام کے تحت بلوچستان کے دیہی علاقوں میں روزگارکے مواقع کوفروغ دیا جائیگا جبکہ صحت اورتعلیمی خدمات میں بھی بہتری لائی جائیگی۔ریفیوجیز پراجیکٹ کے تحت عالمی بینک پاکستان کو5 کروڑ ڈالرکی معاونت فراہم کرے گا۔

وزارت اقتصادی امورکے سیکرٹری نوراحمد نے حکومت پاکستان جبکہ سندھ، خیبرپختونخوا اوربلوچستان کے نمائندوں نے اپنی حکومتوں کی جانب سے معاہدوں پردستخط کئے۔ پاکستان میں عالمی بینک کے کنٹری ڈائریکٹرناجی بن حسائن نے عالمی بینک کی جانب سے معاہدوں پردستخط کئے۔ ناجی بن حسائن نے عالمی بینک کی جانب سے پائیداراورجامع اقتصادی بڑھوتری کے عمل میں پاکستان کی حکومت کے ساتھ تعاون جاری رکھنے کے عزم کااعادہ کیا۔