تازہ ترین
  • بریکنگ :- سانحہ مری ،متعلقہ محکموں کی غفلت ثابت
  • بریکنگ :- افسران واٹس ایپ پرچلتے رہے،تحقیقات میں انکشاف
  • بریکنگ :- افسران صورتحال کو سمجھ نہیں سکے ،رپورٹ
  • بریکنگ :- افسران نےصورتحال کوسنجیدہ لیانہ کسی پلان پرعمل کیا ،رپورٹ
  • بریکنگ :- متعددافسران نے واٹس ایپ میسج تاخیر سے دیکھے ،رپورٹ
  • بریکنگ :- کمشنر، ڈی سی ،اے سی نےغفلت کا مظاہرہ کیا،رپورٹ
  • بریکنگ :- سی پی او،سی ٹی اوذمہ داریاں پوری کرنےمیں ناکام رہے،رپورٹ
  • بریکنگ :- محکمہ جنگلات اور ریسکیو 1122کا مقامی آفس بھی کچھ نہ کرسکا
  • بریکنگ :- محکمہ ہائی وے بھی ذمہ داری پوری کرنے میں ناکام رہا،رپورٹ
  • بریکنگ :- سانحہ مری کی رپورٹ 27 صفحات پر مشتمل ہے
  • بریکنگ :- 4 والیم پرمشتمل افسران اورمقامی لوگوں کے بیانات لیے گئے
  • بریکنگ :- تحقیقاتی کمیٹی کی مری میں محکمہ موسمیات کادفترقائم کرنےکی سفارش
  • بریکنگ :- مری کا ہل اسٹیشن تجاوزات کی وجہ سے گلیوں میں تبدیل ہوگیا،رپورٹ
  • بریکنگ :- غیر قانونی عمارتیں گرانےکی سفارش کی گئی ہے،رپورٹ
  • بریکنگ :- مشینری موجود تھی لیکن آدھا عملہ غائب تھا، رپورٹ

پی ڈی ایم قیادت اسلام آباد میں سرجوڑ کر بیٹھ گئی، لانگ مارچ پر مشاورت

Published On 16 March,2021 03:16 pm

اسلام آباد : (دنیا نیوز) پی ڈی ایم قیادت اسلام آباد میں سرجوڑ کر بیٹھ گئی۔ جس میں لانگ مارچ اور استعفوں کی تجویز پر مشاورت ہوگی۔

مولانا فضل الرحمان کی زیر صدارت اجلاس میں بلاول بھٹو، مریم نواز، محمود خان اچکزئی سمیت دیگر قائدین شریک ہیں۔ اجلاس میں ملک کی سیاسی صورت حال پر مشاور ت کی جائے گی۔ چئیرمین، ڈپٹی چئیرمین سینیٹ الیکشن میں شکست پر تمام جماعتیں رپورٹ پیش کرینگی۔ ذرائع کے مطابق 7 ووٹ کیسے مسترد ہوئے قائدین کو اعتماد میں لیا جائے گا۔ ڈپٹی چئیرمین کو کم ووٹ ملنے پر بھی جے یو آئی کے تحفظات دور کئے جائیں گے۔

 پی ڈی ایم اجلاس سے قبل نواز شریف، فضل الرحمان اور آصف زرداری کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ ہوا، جس میں فضل الرحمان نے کہا کہ اختلافی امور کو حل کرنے کا بہترین فورم پی ڈی ایم ہے، ہم پر بھاری ذمہ داری ہے، عوام کو مایوس نہیں کرنا۔ ن لیگ قائد کا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم کو کامیاب بنانے کیلئے اتفاق رائے سے فیصلے چاہتے ہیں۔

آصف زرداری نے کہا کہ اجلاس کو نتیجہ خیز بنانے کیلئے فریقین کو لچک دکھانا ہوگی، استعفوں سمیت تمام امور پر ایک دوسرے کا مؤقف سنا جائے، عوام پی ڈی ایم کو مسائل سے نجات دہندہ کی طرح دیکھ رہے ہیں، اندرونی اختلافات، مختلف نظریات کے باوجود پی ڈی ایم کا اتحاد ناگزیر ہے، حکمرانوں کی ناعاقبت اندیشی ملکی سیاست کو نقصان پہنچا رہی ہے، پی ڈی ایم کا اتحاد حکمرانوں کے اوچھے ہتھکنڈوں کا مقابلہ کرے گا۔