تازہ ترین
  • بریکنگ :- وزیراعظم 3 فروری کو چین کا دورہ کریں گے
  • بریکنگ :- وزیراعظم کےہمراہ 5 وزرابھی جائیں گے،ذرائع
  • بریکنگ :- وزیراعظم کی وزراکودورہ چین سےمتعلق ہدایت،ذرائع
  • بریکنگ :- چین ساتھ جانے والے وزراکوروناسےمتعلق احتیاط برتیں،وزیراعظم
  • بریکنگ :- متعلقہ وزرااپنی وزارتوں سےمتعلق بریفنگ لیں،وزیراعظم کی ہدایت
  • بریکنگ :- دورہ کےدوران مفاہمتی یادداشتوں اورمنصوبوں سے متعلق تیاری کریں،وزیراعظم

ملتان: نشتر ہسپتال کینسر وارڈ میں کروڑوں کی مشینری 11 سال بعد بھی فعال نہ ہو سکی

Published On 01 December,2021 08:57 am

ملتان: (دنیا نیوز) ملتان نشتر ہسپتال کے کینسر وارڈ میں نصب کروڑوں روپے مالیت کی مشینری کو گیارہ سال بعد بھی فعال نہ کیا جاسکا جس کی وجہ سے کینسر کے مریضوں کی ریڈیو تھراپی اور کیمو کے حوالے سے مشکلات برقرار ہیں۔

ملتان میں چند سال پہلے نشتر ہسپتال کے کینسر وارڈ کیلئے کروڑوں روپے مالیت کی مشینری خریدی گئی جس کی خریداری میں مبینہ کرپشن اور مختلف وجوہات کی بنا پر نئی مشینری کو نصب نہ کیا جا سکا لیکن موجودہ صورتحال میں مشینری کو لگانے کے باوجود تاحال فعال نہیں کیا جا سکا۔ کینسر جیسے مہنگے علاج سے عاجز مریضوں کی اکثریت ہسپتال میں خوار ہو رہی ہے۔

ہسپتال انتظامیہ کا موقف ہے کہ کورونا کے چکر میں حکومت نے کینسر کے مریضوں کو کیمو کی مفت ادویات بند کر دی ہیں لیکن مشینری کو انسٹال کرنے کے بعد متعلقہ کمپنی کو سافٹ ویئر لگانے کی درخواست کر دی ہے اور اس عمل کو مکمل ہونے میں دو ماہ لگ سکتے ہیں جس کیلئے درد ست تڑپتے مریضوں کو انتظار کرنا پڑیگا۔
حکومت نے نشتر ہسپتال میں سو بیڈز کا کینسر وارڈ بنانے کیلئے پی سی ون منظور کر لیا ہے لیکن وارڈ کی تعمیر کے حوالے سے اٹھانوے کروڑ روپے کا فنڈ بھی تاحال فراہم نہیں کیا گیا۔