تازہ ترین
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکےمزید 907 کیس رپورٹ،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کورونامریضوں کی تعداد 9 لاکھ 49 ہزار 175 ہوگئی
  • بریکنگ :- ملک میں کوروناکےایکٹوکیسزکی تعداد 34 ہزار 20 ہے،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 24 گھنٹےکےدوران کوروناسےمزید 30 اموات
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کوروناسےجاں بحق افرادکی تعداد 22 ہزار 7 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکے 829 مریض صحت یاب،این سی اوسی
  • بریکنگ :- کوروناسےصحت یاب افرادکی مجموعی تعداد 8 لاکھ 93 ہزار 148 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےکےدوران 34 ہزار 754 کوروناٹیسٹ کیےگئے
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں ایک کروڑ 41 لاکھ 48 ہزار 424 کوروناٹیسٹ کیےجاچکے
  • بریکنگ :- کوروناسےمتاثر 2238 مریضوں کی حالت تشویشناک،این سی اوسی
  • بریکنگ :- پنجاب 3 لاکھ 45 ہزار 65،سندھ میں 3 لاکھ 32 ہزار 254 کیسز
  • بریکنگ :- خیبرپختونخواایک لاکھ 37 ہزار 75،بلوچستان میں 26 ہزار 633 کیس رپورٹ
  • بریکنگ :- اسلام آباد 82 ہزار 368،گلگت بلتستان میں 5 ہزار 813 کیسز
  • بریکنگ :- آزادکشمیرمیں کورونامریضوں کی تعداد 19 ہزار 967 ہوگئی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک میں کورونامثبت کیسزکی شرح 2.61 فیصدرہی،این سی اوسی

محمد صادق کی جواد ظریف سے ملاقات، افغان امن عمل پر تبادلہ خیال

Published On 15 March,2021 10:17 pm

اسلام آباد: (ویب ڈیسک) ایران کے دورے پر گئے وزیراعظم عمران خان کے خصوصی نمائندے برائے افغانستان کے امور محمد صادق نے ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف سے ملاقات کی۔

ایرانی میڈیا کے مطابق محمد صادق جو گزشتہ روز کے دوران، ایک سیاسی وفد کی قیادت میں ایران سے افغان امور سے مشاورت کے سلسلے میں ایران کے دورے پر پہنچ گئے، نے محمد جواد ظریف سے ملاقات اور گفتگو کی۔

اس موقع پر وزیراعظم کے خصوصی نمائندے نے مذاکرات سے اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے افغانستان کی تبدیلیوں سے متعلق پاکستانی موقف کے بارے میں آگاہ کیا۔

ایرانی وزیر خارجہ نے افغانستان میں قیام امن کی ضرورت پر تبصرہ کرتے ہوئے اس حوالے سے علاقائی ممالک کے تعاون اور افغان عوام کی کامیابیوں کی حمایت کی ضرورت پر زور دیا۔

ایرانی وزیر خارجہ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ افغانستان میں امن کے لیے ایران کے تمام ممالک کے ساتھ قریبی رابطہ ہے، اسلامی جمہوریہ افغانستان کی خودمختاری کا احترام کرتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں، افغان امن عمل: زلمے خلیل زاد متحرک، عبد الغنی برادر اور اشرف غنی سے ملاقاتیں

غیر ملکی میڈیا کے مطابق یہ بات قابل ذکر ہے کہ یہ پاکستانی وزیر اعظم کے خصوصی نمائندے کی حیثیت سے محمد صادق کا پہلا سرکاری دورہ ہے۔

واضح رہے کہ ایران اور پاکستان کے خصوصی نمائندے برائے افغانستان کے امور نے اس سے پہلے ظریف کے حالیہ دورہ اسلام آباد سے ایک دوسرے سے ملاقات اور گفتگو کی تھی۔

یاد رہے کہ اس سے قبل وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کی قطر کے وزیراعظم خالد بن خلیفہ سے ملاقات ہوئی جس میں دو طرفہ تعلقات اور تجارت کے فروغ کے حوالے سے بات چیت کی گئی۔

دونوں رہنماؤں کے درمیان ملاقات میں قطر میں پاکستانی مین پاور بڑھانے اور داخلی سلامتی کے امور پر بھی سیر حاصل گفتگو کی گئی۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ قطر کا افغانستان کے پائیدار امن میں کردار بہت مثالی ہے۔ افغانستان مین پائیدار امن پاکستان اور قطر کا دیرینہ مقصد ہے۔ افغانستان کے امن میں سٹیک ہولڈرز کے ساتھ کامیاب مذاکرات کا سہرا قطر کے سر ہے۔