تازہ ترین
  • بریکنگ :- وزیراعظم شہبازشریف کی زیرصدارت اتحادیوں کااجلاس
  • بریکنگ :- فوری الیکشن کی تاریخ دینےکاعمران خان کامطالبہ مسترد،ذرائع
  • بریکنگ :- حکومت 2023 تک اپنی مدت پورےکرےگی،تمام جماعتوں کامتفقہ فیصلہ
  • بریکنگ :- تمام اتحادی جماعتوں نےوزیراعظم کےفیصلےکی توثیق کردی،ذرائع
  • بریکنگ :- اتحادیوں کاالیکشن سےقبل اصلاحات کاعمل جلدمکمل کرنےپرزور،ذرائع
  • بریکنگ :- وزیراعظم،اتحادیوں کامعیشت کی بحالی کیلئےفوری اقدامات کرنےکافیصلہ،ذرائع
  • بریکنگ :- اتحادیوں کی سیاسی بحران،معاشی استحکام کیلئےمکمل تعاون کی یقین دہانی
  • بریکنگ :- وزیراعظم نےروپےکی قدرمیں اضافےودیگرمعاشی امورپراعتمادمیں لیا
  • بریکنگ :- شرکانےعمران خان کی 4سالہ کارکردگی کی حقیقت عوام کےسامنےلانےپرزوردیا،ذرائع

فنانس ترمیمی بل 2021ء میں موبائل فون مزید مہنگے

Published On 01 January,2022 06:18 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) قومی اسمبلی میں پیش کیے جانے کے بعد فنانس ترمیمی بل 2021ء میں موبائل فون مزید مہنگے ہو گئے۔

عالمی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف) کے دباؤ پر قومی اسمبلی میں وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین نے فنانس ترمیمی بل پیش کیا گیا، اس بل میں امپورٹڈ اشیاء سمیت متعدد چیزوں کو مہنگا کر دیا ہے۔

مہنگے موبائل فون رکھنے والے شوقین کے لیے بری خبر ہے، مہنگے موبائل پر رعایتی فکسڈ ٹیکس ختم کر دیا گیا ہے، 17 فیصد سیلز ٹیکس صرف 30 سے 200 ڈالر مالیت کے موبائل پر ٹیکس میں کوئی تبدیل نہیں۔

دنیا نیوز کو موصول دستاویز کے مطابق اب 200 سے 350 ڈالر کے موبائل پر 17 فیصد سیلز ٹیکس عائد کیا جائے گا، 200 سے 350 ڈالرمالیت کے موبائل پر 1750 روپے ٹیکس تھا، اب 351 سے 500 ڈالرمالیت کے موبائل فون پر 17 فیصد سیلز ٹیکس عائد کیا گیا ہے۔

دستاویز کے مطابق پہلے 351 سے 500 ڈالرمالیت کے موبائل پر 5400 روپے فکس ٹیکس تھا، اب 501 ڈالر یا زائد مالیت کے موبائل پر 17 فیصد سیلز ٹیکس عائد کیا گیا ہے، پہلے 501 ڈالر یا زائد مالیت کے موبائل پر 9270 روپے ٹیکس تھا، اب 1300 ڈالر کے موبائل پر 9270 کی بجائے 42000 روپے ٹیکس ہوگا۔