تازہ ترین
  • بریکنگ :- وزیراعظم شہبازشریف نےوفاقی کابینہ کااجلاس طلب کرلیا
  • بریکنگ :- اسلام آباد:وفاقی کابینہ کااجلاس کل وزیراعظم ہاؤس میں ہوگا
  • بریکنگ :- اسلام آباد:وفاقی کابینہ اجلاس کا 5 نکاتی ایجنڈاجاری
  • بریکنگ :- قومی ویسٹ مینجمنٹ پالیسی 2022 کابینہ میں پیش ہوگی
  • بریکنگ :- مختلف ممالک سےمتعلق ویزہ پالیسی میں تبدیلی کامعاملہ زیرغورآئےگا
  • بریکنگ :- اقتصادی رابطہ کمیٹی کے 22 جون کےفیصلوں کی توثیق ہوگی
  • بریکنگ :- کابینہ کی قانون سازکمیٹی کے 23 جون کےفیصلوں کی توثیق ایجنڈےمیں شامل

تیس گھنٹے جلنے والی دنیا کی مہنگی ترین موم بتی فروخت کیلئے پیش

Published On 23 July,2021 11:16 am

لاہور: (ویب ڈیسک) تیس گھنٹے جلنے والی دنیا کی مہنگی ترین موم بتی فروخت کیلئے پیش کر دی گئی ہے جس کی پاکستانی روپوں میں قیمت 4 لاکھ 40 ہزار کے قریب ہے۔

رپورٹ کے مطابق  سمیلزلائک کیپٹل ازم  نامی یہ موم بتی جب جلائی جاتی ہے تو اس سے خالص چمڑے سے تیار کئے گئے بٹوے اور نوٹوں کی خوشبو آتی ہے جس سے سرمایہ دارانہ نظام کا احساس ہوتا ہے۔ اس موم بتی کو بازیافت شدہ (ری سائیکل) اجزا سے تیار کیا جاتا ہے۔

موم بتی کی قیمت سن کر ذہن میں فوری سوال آتا ہے کہ اس کی قیمت اتنی زیادہ کیوں ہے تو کمپنی کا کہنا ہے کہ اس کی فروخت سے حاصل ہونے والی رقم سے برطانیہ کے بے گھر لوگوں کی مدد کی جائے گی،یہ موم بتی فلاحی مقاصد کیلئے تیار کی گئی ہے اس لئے اس کی قیمت زیادہ ہے۔

کمپنی کا دعوی ہے کہ تمام موم بتیاں ہاتھوں سے تیار کی جاتی ہیں،اس لئے معیار کی ضمانت دی جا سکتی ہے، ساتھ ساتھ چونکہ ضرورت مند لوگوں کی مدد بھی کی جاتی ہے اس لئے امرا اس کو خریدنے میں زیادہ تامل نہیں کرتے۔تاہم یہ معلوم نہیں ہو سکا کہ ابھی تک کتنے لوگوں نے اس موم بتی کو خریدا ہے۔